شنگھائی تعاون تنظیم رکن ممالک کے درمیان علاقائی و بین الاقوامی معاملات پر تعاون کو فروغ دینے کیلئے مناسب ترین پلیٹ فارم ہے، ایس سی اوجو دنیا کی آدھی آبادی اور علمی جی ڈی پی کی 20فیصد کی نمائندگی کرتی ہے

چین میں پاکستان کے سفیر مسعود خالد کا چینی میڈیا کو انٹرویو

منگل جون 19:37

شنگھائی تعاون تنظیم رکن ممالک کے درمیان علاقائی و بین الاقوامی معاملات ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) چین میں پاکستان کے سفیر مسعود خالد نے کہا ہے کہ شنگھائی تعاون تنظیم(ایس سی او)رکن ممالک کے درمیان علاقائی و بین الاقوامی معاملات پر تعاون کو فروغ دینے کیلئے مناسب ترین پلیٹ فارم ہے۔یہ بات انہوں نے گزشتہ روز 18ویں ایس سی او سمٹ سے قبل چینی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے کہی۔ایس سی او رواںماہ 9 جون سے چین کے ساحلی شہر چنگڈو میں منعقد ہو رہی ہے۔

سفیر نے کہا کہ ایس سی او نے لیگل فریم ورک قائم کر رکھا ہے جس سے رکن ملکوں کے درمیان تعاون کو فروغ ملے گا۔انہوں نے ایس سی او کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ یہ دنیا کی سب سے بڑی علاقائی انٹر نیشنل تنظیم بن چکی ہے ،جو دنیا کی آدھی آبادی اور علمی جی ڈی پی کی 20فیصد کی نمائندگی کرتی ہے۔

(جاری ہے)

مسعود خالد نے کہا کہ پاکستان نے گزشتہ سال مکمل رکن کی حیثیت سے شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہ اجلاس میں شرکت کی جو پاکستان کیلئے اہم سنگ میل ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان تنظیم کے مقاصد کے حصول کیلئے اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔انہوں نے کہا کہ ایس سی او علاقائی استحکام و سلامتی کو فروغ دینے کیلئے زیادہ اہم کرادار ادا کریگی جو دہشت گردی کے خاتمہ اور مشترکہ چیلنجوں پر قابو پانے میں موثر پلیٹ فارم ثابت ہوگی۔

متعلقہ عنوان :