پیپلز پارٹی کا چیف الیکشن کمشنر کے نام خط ،بیت المال، زکواة و عشر اوربی آئی ایس پی کے سربراہان کو تبدیل کرنے کا مطالبہ

منگل جون 18:20

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) پاکستان پیپلز پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے رکن عامر فدا پراچہ نے چیف الیکشن کمشنر کے نام خط میں بیت المال، زکواة و عشر اور بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے سربراہان کو تبدیل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق منگل کو پیپلز پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے رکن عامر فدا پراچہ نے چیف الیکشن کمشنر کے نام خط لکھ دیا ہے،،چیف الیکشن کمشنر کے نام خط میں عامر فدا پراچہ نے کہا کہ عام انتخابات 25جولائی کو منعقد ہونے ہیں وفاقی اور صوبائی حکومتیں اپنی مدت پوری کرنے کے بعد ختم ہو چکی ہیںمگر ان کے تعینات کردہ سربراہان ابھی تک ذمے داریاں سرانجام دے رہے ہیں۔

خط میں انہوں کہا کہ نگران حکومتوں کا کردار سابقہ حکومتوں کے اثرات کو زائل کرنا ہوتا ہے تاکہ آنے والے انتخابات پر سابقہ حکومتوں کے اثرات نہ ہوں۔

(جاری ہے)

عامر فدا پراچہ نے چیف الیکشن کمشنر کے نام خط میں لکھا ہے کہ الیکشن کمیشن کی آئینی ذمہ داری ہے کہ اس بات کو یقینی بنائے کہ انتخابات آزادانہ اور شفاف منعقد ہوں۔۔الیکشن کمیشن نئی تعیناتیوں، تبادلوں اور نئے منصوبے شروع کرنے پر پابندی عائد کر چکا ہے تاکہ شفاف انتخابات کے لئے تمام فریقین کو برابر مواقع دستیاب ہوں۔

انہوں نے خط میں کہا ہے کہ یہ ادارے جو کہ براہِ راست عوام سے متعلق ہیں اور ان کے سربراہان ووٹروں کو اپنی جماعتوں کی حمایت میں حق رائے دہی پر راغب کرنے کے لئے قومی خزانے کا استعمال کر سکتے ہیں اور یہ پری پول ریگنگ کو روکنے اور شفاف انتخابات کے ذریعے جمہوریت قائم کرنے کے عمل کو متاثر کرنے کا باعث بنے گی۔ انہوں خط میں چیف الیکشن کمشنر سے درخواست کی ہے کہ ان محکموں کے سربراہان کو تبدیل کرکے غیرجانبدار شخصیات کو تعینات کیا جائے تاکہ ملک میں آزادانہ، غیرجانبدارانہ اور شفاف انتخابات کو یقین بنایا جا سکے۔