سی ڈی اے جی سیون کی مارکیٹوں کی ترقی پر خصوصی توجہ دی،ْ محمد نوید ملک

باقی ماندہ آٹو ورکشاپوں کوبھی پلاٹ الاٹ کر کے آئی ٹین منتقل کیا جائے ،ْ راجہ سفیر

منگل جون 19:56

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) ٹریڈرز ویلفیئر ایسوسی ایشن جی سیون ون اسلام آباد کے ایک وفد نے ایسوسی ایشن کے صدر راجہ سفیر کی قیادت میں اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا دورہ کیا اور چیمبر کے قائم مقام صدر محمد نوید ملک کو اپنی مارکیٹ کے مسائل سے آگاہ کیا۔ چیمبر کے نائب صدر نثار مرزا، سابق صدر باصر دائو، خالد چوہدری، چوہدری سلیم، سید حیدر اسد، اشتیاق احمد، محمد اسحاق اور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔

وفد سے خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے قائم م قام صدر محمد نوید ملک نے کہا کہ جی سیون سیکٹر اسلام آباد کا بہت پرانا سیکٹر ہے لیکن ترقیاتی کام نہ ہونے کی وجہ سے اس کی مارکیٹوں کی حالت بہت خستہ ہو چکی ہے لہذا انہوں نے سی ڈی اے سب مطالبہ کیا کہ وہ جی سیون سیکٹر کی مارکیٹوں کی بہتر ترقی پر خصوصی توجہ دے تا کہ تاجر برادری سہولت کے ساتھ کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دے سکے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ سی ڈی اے نے وعدوں کے باوجود جی سیون ون کی مارکیٹ میں ابھی تک فلٹریشن پلانٹ نہیں لگایا جس وجہ سے تاجربرادری پینے کے صاف پانی کی سہولت سے محروم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پبلک باتھ رومز نہ ہونے کہ وجہ سے بھی تاجروں کو مشکلات درپیش ہیں۔ انہوںنے کہا کہ مارکیٹ میں سڑکوں اور فٹ پاتھ بھی ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔ لہذا سی ڈی اے ان تمام مسائل کو حل کرنے کیلئے فوری اقدامات اٹھائے۔

ٹریڈرز ویلفیئر ایسوسی ایشن ، جی سیون ون کے صدر راجہ سفیر اور سینئر نائب صدر چوہدری محمد سلیم نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سی ڈی اے نے چیمبر کے تعاون سے 1995میں محدود نیلامی کے تحت آئی ٹین سیکٹر میں آٹو ورکشاپ، سٹیل فیبریکیٹرز اور سریے کا کاروبار کرنے والے تاجروں کو 337 پلاٹ الاٹ کئے تھے تا کہ دیگر مارکیٹوں سے ان کاروباروں کو ایک جگہ منتقل کیا جائے۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ چیمبر کے اشتراک سے اسلام آباد کی دیگر مارکیٹوں میں موجود آٹو ورکشاپوں کو بھی پلاٹ الاٹ کر کے آئی ٹین منتقل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ جی سیون ون کی مارکیٹ میں صفائی کی صورتحال بہت ناقص ہے کیونکہ سی ڈی اے نے صفائی کا کام ٹھیکے پر دیا ہوا ہے لیکن ٹھیکیدار کا عملہ کام نہیں کرتا جس وجہ سے ماکیٹ میں ہر وقت گندگی پائی جاتی ہے۔ لہذا انہوں نے سی ڈی اے سے مطالبہ کیا کہ وہ مارکیٹ میں صفائی کا نظام بہتر کرے تا کہ صاف ستھرے ماحول میں کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دیا جا سکے۔