خویشگی بالا میں خاتون کو پھانسی دیکر قتل کردیاگیا

منگل جون 19:57

نوشہرہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) نوشہرہ کے علاقے خویشگی بالا میں خاتون کو رسی سے پھندہ بناکرپھانسی دیکر قتل کردیاگیا۔ مقتولہ کے قتل کی دعویداری مقتولہ کے دیور پر کردی گئی مقتولہ کا شوہر بیرون ملک محنت مزدوری کرتا ہے ملزم ارتکاب جرم کے بعد فرار ہوگیا۔پھانسی سے قبل مقتولہ کی شوہر سے فون پر بات ہوئی اور بعدازاں مبینہ طور پر مقتولہ کے دیور نے اس کو پھانسی دے دی۔

تفصیلات کے مطابق محمد نعیم ولد محمد زمان ساکن خویشگی بالا نے پولیس کورپورٹ درج کراتے ہوئے کہا کہ اس کی بیٹی23 سالہ زرمینہ کی شادی تین سال قبل عدنان ساکن خویشگی بالا سے ہوئی تھی۔ جو سعودی عرب میں مزدوری کرتا ہے اوراسکا ایک بیٹا بھی پیدا ہوا جو تقریبا پندرہ ماہ کا تھا۔ وہ اپنے گھر میں موجود تھا کہ اس کو اطلاع ملی کہ اس کی بیٹی جاںبحق ہوگئی ہے۔

(جاری ہے)

جب وہ بیٹی کے گھر پہنچا تواس کی ساس اور نواسہ گھر میں موجود تھا۔ اورا سکی بیٹی چارپائی پر فوت شدہ پڑی تھی۔اس کو یقین ہے کہ اس کی بیٹی کو اس کے دیور فرقان ولد میر زمان ساکن خویشگی بالا نے قتل کیا محمد نعیم نے اخبارنیویسوں کوبتایا کہ اس کی بیٹی نے سسرال کا ہر ظلم سہا مگر کبھی گلہ شکوہ نہیں کیا۔ تین ماہ سے میکے انے پر بھی پابندی لگ گئی تھی اور قتل سے پہلے اس کی بیٹی کی اپنے شوہر سے بات ہوئی۔ اس کے بعداسے اپنے دیور نے قتل کردیا۔ انھوں نے ڈی پی او نوشہرہ اور اعلیٰ عدلیہ سے انصاف کامطالبہ کیا ہے۔