متان کی سٹرکوں کی ابتر صورتحال نے انتظامیہ کی نااہلی کا پول کھول دیا

ملتان میں میٹرو بس کے بعد ٹرک بھی سڑک میں دھنس گیا،انتظامیہ ٹرک ڈرائیور سے ٹرک کو نکالنے کے پیسے مانگنے لگی

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس منگل جون 19:49

متان کی سٹرکوں کی ابتر صورتحال نے انتظامیہ کی نااہلی کا پول کھول دیا
ملتان(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار-05 جون 2018ء) ::ملتان کی سٹرکوں کی ابتر صورتحال نے انتظامیہ کی نااہلی کا پول کھول دیا۔ ملتان میں میٹرو بس کے بعد ٹرک بھی سڑک میں دھنس گیا۔انتظامیہ ٹرک ڈرائیور سے ٹرک کو نکالنے کے پیسے مانگنے لگی۔تفصیلات کے مطابق پنجاب میں مسلم لیگ ن کی حکومت نے میاں محمد شہباز شریف کی قیادت میں اتنی ترقی شائد ہی کسی اور شعبے میں کی ہو جتنی ترقی سڑکوں کے معاملے میں کی ہے۔

میاں محمد شہباز شریف کی قیادت میں پنجاب حکومت نے صوبے کے طول عرض میں سڑکوں کا جال بچھا دیا ہے مگر ملتان میں سٹرکوں کی ابتر صورتحال نے انتظامیہ کی نااہلی کا پول کھول دیا۔سڑکوں کی حالت اس قدر خراب ہے کہ یہ سڑکیں بھاری ٹریفک کا وزن برداشت کرنے کے قابل بھی نہیں ہیں۔۔ملتان میں کچھ روز قبل ایسے ہی مناظر دیکھنے کو ملے جب میٹرو بس سڑک میں دھنس گئی اور بعد ازاں اسے کرینوں کی مدد سے نکالا گیا۔

(جاری ہے)

اس حوالے سے تازہ ترین خبر یہ آئی ہے کہ ملتان میں میٹرو بس کے بعد ٹرک بھی سڑک میں دھنس گیا۔یہ دونوں واقعات سورج میانی روڈ پر ہی پیش آئے ہیں۔یہ سڑک ایک مہینے کے دوران دو مرتبہ دھنس چکی ہے۔12 مئی کو سپیڈو بس کے دھنسنے کے باوجود انتظامیہ نے اس بات کا نوٹس نہیں لیا اور بات آئی گئی ہو گئی۔تا ہم آج پھر ایک مرتبہ چینی سے بھرا ٹرک اس سڑک سے گزرتے ہوئے زمین میں دھنس گیا اور انتظامیہ اس ٹرک کو نکالنے کے لیے ڈرائیور سے پیسوں کی ڈیمانڈ کرنے لگی۔

اس حوالے سے مقامی لوگوں کا کہنا تھا کہ کچھ عرصہ قبل سیوریج کے لیے گڑھے کھودے گئے تھے اور پھر ان کو بھرنے کے لیے بجری کی بجائے صرف اور صرف مٹی کا استعمال کیا گیا اور بعد میں اسی پر ناقص میٹیریل ڈال کر کہا گیا کہ سڑک بنا دی گئی ہے۔عوام کا کہنا تھا کہ انتظامیہ نے اس حوالے سے سنجیدہ نوٹس نہ لیا تو یہ چیز کسی بڑے حادثے کا پیش خیمہ ثابت ہو سکتی ہے۔