عوام کو صاف پانی کی فراہمی کیلئے پانی کی 22سکیموں کی بحالی کیلئے کروڑوں کے فنڈز منظور کروا لیے گئے

بحال کر کے عوام کو پینے کا صاف پانی فراہم کیا جائیگا

منگل جون 20:36

جہلم(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) ڈپٹی کمشنر کیپٹن )ر( عبدالستار عیسانی کی خصوصی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر پنڈ دادنخان مجاہد عباس نے محکمہ پولیس اور پبلک ہیلتھ انجینرنگ کے افسران کے ہمراہ مختلف مقامات پر قائم 10 سے زائد پانی کے غیر قانونی کنکشن کاٹ کر میرٹ کی بنیاد پر کنکشنز کا اجرا کیا ۔ تفصیلات کے مطابق اے سی پنڈ دادنخان نے ایکسین پبلک ہیلتھ انجینرنگ جہلم کے ہمراہ غیر قانونی کنکشنز کے خلاف کریک ڈاؤن کر تے ہوئے لیلہ، دودی،پھاپھڑا اور کہانہ میں لگے متعدد غیر قانونی پانی کے کنکشنوں کوایکشن لیتے ہوئے فوری طور پر منقطع کیا اور موضع کہانہ میں معمول کے مطابق پانی کی دستیابی کو یقینی بنایا۔

علاقہ مکینوں نے اے سی کی کارروائی کو زبردست سراہا۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر جہلم کپٹن )ر( عبدالستار عیسانی نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے متعددواٹر سپلائی سکیمیں پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے کام کر رہی ہیں جس میں واٹر سپلائی سکیم نارومی ڈھن بھی شامل ہے۔

(جاری ہے)

تحصیل پنڈ دادنخان کے عوام کو صاف پانی کی فراہمی کے لئے ڈپٹی کمشنر عبدالستار عیسانی نے 22 سکیموں کی بحالی کے لئے آٹھ کروڑ چار لاکھ اور تئیس ہزار روپے کے فنڈز منگوا کر متعلقہ حکام کو سکیموں کی بحالی کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔

ڈپٹی کمشنر کا کہنا تھا کہ عوامی مسائل کا ازالہ کے بغیر ضلعی انتظامیہ کی ذمہ داری نا مکمل ہے ، انہوں نے مزید بتایا کہ اپریل کے مہینے میں کارروائی کرتے ہوئے 40 سے زائد غیر قانونی کنکشن کاٹے گئے تھے انکی روک تھام کے لئے محکمہ پبلک ہیلتھ اور متعلقہ اے سی کی سربراہی میں کارروایاں جاری رہیں گی۔ اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر پنڈ دادنخان مجاہد عباس نے بتایا کہ ٹیم کے ہمراہ کارروائی کرتے ہوئے 2 سروس سٹیشنز کا غیر قانونی کنکشن کاٹ کر مقامی افراد کو پینے کا صاف پانی فراہم کیا گیا، انکا کہنا تھا کہ اہل علاقہ اور ٹیم کی نشاندہی پر کریک ڈاؤن مہم جاری رہی گی

متعلقہ عنوان :