ماہ رمضان کے دوران بھی نوکنڈی میں پانی کی شدیدقلت

منگل جون 21:19

نوکنڈی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) ماہ رمضان کے دوران بھی نوکنڈی میں شدیدپانی کی قلت ختم نہ ہوسکی ، گھٹ واٹراسکیم میں انتہائی ناقص مٹریل استعمال کیاگیاہے عوام کے نام پر ترقیاتی فنڈز کو ہرگزکرپشن ہونے نہیں دینگے اورنہ ہی اس مسلے پرخاموش بیٹھے گے نیب گھٹ واٹراسکیم پرایکشن لیکر تحقیقات شروع کردے ۔ان خیالات کااظہانوکنڈی کے چیئرمین حاجی عرض محمد بڑیچ نے نوکنڈی میں پانی کی شدیدقلت کے خلاف بیان جاری کرتے ہوئے کہاہے کہ ماہ رمضان کے مقدس مہینے میں روزے داروں کوپانی کی اصول کے لیے سخت پریشانی کاسامناکرناپڑرہا ہے ،گھٹ واٹر اسکیم میں انتہائی ناقص مٹریل استعمال کیاگیاہے منصوبے میں ہونے والے کرپشن کاپول قلت آب کی وجہ سے کھل گیا۔

انہوں نے کہاگھٹ واٹرمنصوبے میں بڑی پیمانے پرخوردبردہوئی ہے اور انتہائی ناقص پائپ خریدے گئے ہے جوآئے روز ٹھوٹ جاتے ہے اور بار بار انجینئیرزآکربھی اس مسلے کوحل نہیں کرپارہے ہے اور پانی بے دردی سے ضائع ہورہی ہے جس کی وجہ سے شہر میں پانی کی سپلائی معطل ہے بہت مشکل ہے کہ یہ پروجیکٹ چند ماہ تک کامیاب ہوں ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہاکہ سیندک کے سوشل فنڈکوملی بھگت کرکے کرپشن کی نظرکیاگیااور عوام کودھوکہ دیاگیاہمیں پہلے بھی گھٹ واٹراسکیم پہ تحفظات تھے اور ہم نے بقاعدہ نیب میں درخواستیں جمع کیے ہے اور اب دوبارہ نیب اور دیگرتحقیقاتی اداروں کے نوٹس میں لانا چاہتے ہے کہ وہ گھٹ واٹر منصوبے میں خوردبرد کافوری نوٹس لیکر زمہ داران کے خلاف سخت ایکشن لیں۔

متعلقہ عنوان :