جرمن چانسلر انجیلا میرکل کی مہاجرین کے لیے لچک پر مصر، چیک جمہوریہ مخالف

یونین کی ہر ریاست کو اپنی اپنی قومی سرحد کی نگرانی اور تحفظ کا اختیار حاصل ہے،چیک جمہوریہ کا ردعمل

بدھ جون 12:40

پراگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) جرمن چانسلر انجیلا میرکل کی جانب سے مہاجرین سے متعلق یورپی پالیسیوں کی نرمی کے خیال کے جواب میں چیک جمہوریہ نے کہاہے کہ کہ یونین کی ہر ریاست کو اپنی اپنی قومی سرحد کی نگرانی اور تحفظ کا اختیار حاصل ہے۔۔جرمن چانسلر انجیلا میرکل نے اپنے ایک بیان میں یہ خیال پیش کیا تھا کہ یورپی یونین تارکین وطن سے متعلق اپنی پالیسیوں میں نرمی کا مظاہرہ کرے۔

امریکی ٹی وی کے مطابق چیک جمہوریہ کی جانب سے میرکل کے اس بیان پر تنقید کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ یورپی یونین کی ہر رکن ریاست کو اپنی اپنی قومی سرحد کی حفاظت خود کرنا چاہیے۔اس سے قبل چیک جمہوریہ حکومت نے یورپی کمیشن کی جانب سے مہاجرین کی تقسیم سے متعلق کوٹہ کے نظام کو مسترد کرتے ہوئے اس منصوبے کے تحت تارکین وطن کو اپنے ہاں جگہ دینے سے صاف انکار کر دیا تھا۔

(جاری ہے)

یورپی کمیشن کے منصوبے کے مطابق اٹلی اور یونان جیسے ممالک، جو مہاجرین کے بحران سے شدید متاثرہ ہیں، وہاں موجود تارکین وطن کو یورپی یونین کی مختلف رکن ریاستوں میں تقسیم کیا جانا تھا، تاکہ متاثرہ ممالک کا بوجھ بانٹا جا سکے۔چیک جمہوریہ کے وزیراعظم آندرے بابیِس نے میرکل کے بیان پر اپنے ردعمل میں کہاکہ یہ خیال کہ فرونٹیکس سرحدوں کی نگرانی کا تمام کام خود ہی کر لے گی، طویل المدتی بنیادوں پر حقیقت پسندانہ نہیں ہے، اس لیے ہر رکن ریاست کو اپنے اپنے طور پر اپنی سرحد کی حفاظت کرنا چاہیے۔

بعد میں اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں بھی بابِیس نے کہا کہ وہ یورپی یونین کی بیرونی سرحدوں کی اجتماعی نگرانی کے مخالف نہیں ہیں، تاہم یورپی یونین کو ہر رکن ریاست کی اہلیت کو استعمال کرنے دینا چاہیے۔