بغیر انسان والے ’’شارک جنڈ‘‘جہازوں کو سمندر ی لڑائیوں اورفوجی گشت میں استعمال کیا جائیگا

بدھ جون 13:40

بیجنگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) بغیر انسان کے ڑورن کی طرح کے جہازوں کی فارمیشن نے پڑتال کی گئی اور اس طرح انہوں نے چین کے صوبہ گوانگ ڈائونگ کے شہر جوہائی کے قریب سمندر میں فوجی استعمال کیلئے اپنی صلاحیت کا مظاہرہ کیا ہے ،یہ بات کمپنی کی طرف سے گذشتہ روز جریدہ گلوبل ٹائمز کو بھیجے گئے ایک بیان میں کہی گئی ہے ،کشتیوں نے مبینہ طور پر جزائر اور سمندری چوٹیوں سے گریز کیا پھلوں اور سرنگوں کو پار کیا اور’’شہری ۔

فوجی‘‘ نعرے کے ساتھ طیارہ بردار جہاز کی شکل میں اپنی فارمیشن کو تبدیل کیا ،جبوبی چین میں قائم مینو فیکچرل ین جو ٹک ’’شارک جنڈ ‘‘کو عوامی سپاہ آزادی (پی ایل ای)کے ہاتھ میں دینے کے لیے چین کی ہتھیاروں کی صنعت کی ساتھ مل کر کام کر رہی ہے ۔

(جاری ہے)

امریکہ سمیت مغربی فوجی طاقتیں سمندر پر ’’فضائی اور ’’شارک جنڈوں میں بحری ،’’ڈرون جنڈوں کیلئے ’’ چنونٹیوں کے جنڈوں ‘‘ سمیت بغیر انسان والے سازو سامان کو ترقی دے رہے ہیں ۔

کمپنی کے بیان میں کہا گیا ہے کہ ادارے نگرانی،کمان اور اٹیک کے لیے بغیر انسان والے جہازوں کے سٹمیٹک ڈائسیز کو مزید ترقی دیگی اور مختلف جنگی امور کے ساتھ ’’شارک جنڈ‘‘ تشکیل دیںگے۔۔کمپنی نے روزمرہ فرائض میں استعمال اور حقیقی بحری جنگوں اور ہمہ وقت چینی علاقائی پانیوں کے تحفظ کیلئے ’’شارک جنڈ‘‘ کے فروغ کا عزم کا اظہار کیا ہے ۔ بغیر انسان والی کشتیوں کے جنڈ کو انتہائی استعداد کے ساتھ ایسکاٹنگ ،مائین سوئیپنگ ،انٹیلی جٹس کے حصول اور خشکی اور بحری کی کارروائیوں میں استعمال کئے جا سکتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :