بڑے آبی منصوبوں پر بروقت کام نہ ہونے سے توانائی بحران سنگین ہوا‘ شہباز اسلم

توانائی بحران پر قابو پانے کیلئے کالا باغ ڈیم کی فوری تعمیر کا آغاز کیاجائے‘بھارت کی طرف سے دریائے نیلم، چناب کاپانی روکنے کو سنجیدگی سے لیا جائے،کالا باغ ڈیم سے سستی بجلی کے ساتھ توانائی بحران ختم ہوگا‘ فیروز پور روڈ انڈسٹریل اسٹیٹس

بدھ جون 14:14

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) تاجر رہنما و ممبر لاہور چیمبرز آف کامرس وانڈسٹری سابق وائس چیئرمین فرایا شہباز اسلم نے کہا ہے کہ بڑے آبی منصوبوں پر بروقت کام نہ ہونے سے توانائی بحران شدید ہوا ، حکومت نے کالا باغ ڈیم کو ہائیڈرل پاور پراجیکٹ کے تعمیرات کے لیے تیار منصوبوں کی فہرست میں تو شامل کرلیا ہے، ضرورت اس امر کی ہے کہ کالا باغ ڈیم کو دیگر منصوبوں کی طرح سی پیک منصوبوں میں شامل کرکے اس کی فوری تعمیر کا آغاز کیا جائے ۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے فائونڈ ر چیئرمین عدنان بٹ،ارشد بیگ،تنویر احمد،حقیق احمد،شاہد بیگ اور دیگر صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوںنے کہا کہ ہائیڈ ل پاور پراجیکٹ دیگر ذرائع سے بجلی کے حصول کی نسبت سستی بجلی پیدا کرتے ہیں اور دیگر تمام منصوبوں سے مہنگی بجلی حاصل ہوتی ہے تو صنعتکار و عوام دونوں کے لیے مشکلات کا باعث ہے۔

(جاری ہے)

توانائی بحران پر قابو پانے کیلئے کالا باغ ڈیم کی فوری تعمیر کا آغاز کیاجائے ۔شہباز اسلم نے کہا کہ بھارت کی سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزیاں دریائے چناب کا پانی روکنا اور دریائے نیلم پر ڈیم بنانے سے کالا باغ ڈیم کی افادیت اہمیت اختیار کرچکی ہیں اس سے قبل کہ پانی بحران سنگین ہو کالا باغ ڈیم کی فوری تعمیر کا آغا ز شروع کیا جائے تاکہ مستقبل میں پانی کی ضروریات کے ساتھ ساتھ سستی بجلی کا حصول بھی ممکن ہوسکے۔کا لا باغ ڈیم سے سستی بجلی کے ساتھ توانائی بحران بھی ختم ہوگانیز سارا سال دریائوں میں زراعت کے لیے پانی بھی دستیاب رہے گا۔جس سے زراعت و صنعت دونوں ترقی کرینگے۔