آزاد کشمیر: طوفان ،ْآندھی سے 100 گھر، دکانیں تباہ، دو افراد جاں بحق ہوئے ،ْ حکام

متاثرین کی عارضی بحالی کے لیے اس وقت ہم نے خیمے اور دیگر ضروری سامان پہنچا دیا ہے ،ْ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی

بدھ جون 14:41

مظفر آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) آزاد کشمیر کے مختلف علاقوں میں طوفان اور آندھی چلنے کے نتیجے میں 2 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے۔حکام نے بتایا کہ ابتدائی رپورٹس کے مطابق 100 سے زائد گھر اور دکان مکمل طور پر یا جزوی طور پر تباہ ہوئے۔مقامی تاجر محمد صفیر مظفر آباد کی گلشن کالونی میں اپنے زیرتعمیر مکان میں کام کی نگرانی میں مصروف تھے کہ تیز آندھی چلنے سے بلاک ان کے سر پر لگا اور وہ موقع ہی دم توڑ گئے۔

آزاد کشمیر اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر فاروق احمد طاہر کے مطابق ضلع سودھنوتی کے قصبے بلوچ میں گھر کی دیواریں گرنے سے ملیکا افراز نامی 4 سالہ بچی جاں بحق اور ان کا دو سالہ بھائی ادیب زخمی ہوگیا۔انہوںنے کہاکہ بلوچ ٹائون میں درجنوں گھر اور دوتعلیمی اداروں کو نقصان پہنچا ہے تاہم کسی جانی نقصان کے حوالے سے مزید کوئی رپورٹ نہیں آئی۔

(جاری ہے)

ریاستی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر سعید قریشی کے مطابق ضلع باغ کی سب ڈویژن دیر کوٹ کے گائوں غازی آباد اور کیات میں طوفانی آندھی کے نتیجے میں 22 گھر مکمل طور پر تباہ ہوگئے ،ْ 26 دیگر گھروں کو جزوی نقصان پہنچا۔

انہوںنے کہا کہ آندھی نے 22 کے قریب گھروں کی چھتیں اڑا دیں جس کے باعث عوام میں خوف وہراس پھیل گیا تاہم خوش قسمتی سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔سعید قریشی نے کہا کہ غازی آباد اور کیات میں 18 دکانیں مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہیں۔انھوں نے کہا کہ قریبی تحصیل ہری گیہال میں بھی 8 دکان اور 3 گھر مکمل طور پر تباہ ہو گئے ہیں ،ْ کئی افراد زخمی ہوئے۔ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر نے کہا کہ متاثرین کی عارضی بحالی کے لیے اس وقت ہم نے خیمے اور دیگر ضروری سامان پہنچا دیا ہے۔انہوںنے کہاکہ آندھی اور طوفان سے پہنچنے والے نقصان کے بعد بارش کا امکان ہے جس کے باعث عوام مزید تشویش کا شکار ہیں۔