نا قابل یقین! ن لیگ کے رہنما نے جمائما خان کی تعریفوں کے پل باندھ دئیے

مجھے شرمندگی ہے کہ ہمارے لوگوں نے جمائما خان کیساتھ زیادتی کی ہے، ہم نے اسے یہودی بنایا ہے ، جمائما خان بہت عمدہ خاتون ہیں، مجھے اسکی دو چیزوں نے بہت متاثر کیا ہے،ن لیگی رہنما بیرسٹرظفراللہ کی گفتگو

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان بدھ جون 14:54

نا قابل یقین! ن لیگ کے رہنما نے جمائما خان کی تعریفوں کے پل باندھ دئیے
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔06 جون 2018ء) ن لیگ کے رہنما بیرسٹر ظفر اللہ خان نے سیاسی حریف عمران خان کی پہلی اہلیہ جمائما خان کی تعریفوں کے پل باندھ دئیے۔تفصیلات کے مطابق عمران خان کی پہلی اہلیہ جمائما خان کو پاکستان میں شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا۔جمائما خان کو یہودی ایجنٹ جیسے القابات سے بھی نوازا گیا۔اور پھر عمران خان اور جمائما خان کے درمیان طلاق ہو گئی۔

تاہم ن لیگ نے رہنما بیرسٹر ظفر اللہ خان نے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ ہم لوگوں نے جمائما خان کے ساتھ زیادتی کی ہے۔ن لیگی رہنما بیرسٹر ظفر اللہ خان کا کہنا تھا کہ میرا پی ٹی آئی سے شدید اختلاف ہے۔لیکن ہمارے لوگوں نے جمائما خان کے ساتھ زیادتی کی ہے۔اور مجھے شرم آتی ہے کہ ہم نےجمائما خان کو یہودی کہا۔

(جاری ہے)

پہلی بات تو یہ ہے کہ اللہ کے نبی نے یہودی سے شادی کرنے کی اجازت دی ہوئی ہے۔

لہذا اس میں کوئی بری بات نہیں ہے اور دوسری بات یہ ہے کہ اگر جمائما خان کہتی تھی کہ میں مسلمان ہوں تو ہم کون ہوتے ہیں ان کو کچھ کہنے والے۔میں جمائما خان کی دو باتوں سے ہت متاثر ہوا ہوں اور میرے خیال سے وہ بہت معزز خاتون ہیں۔اور میں پاکستان کی طرف سے کہتا ہوں کہ ہم نے  جمائما خان کے ساتھ زیادتی کی ہے۔بیرسٹر ظفر اللہ خان کا کہنا تھا کہ عمران خان کا بنی گالا والا گھر جمائما خان نے خریدا۔

لیکن ان دونوں کی طلاق ہو گئی۔لیکن جمائما خان نے خان صاحب سے کہا کہ میں نے یہ گھر بے نامی میں خریدا تھا،اب ہماری طلاق ہو گئی ہے لیکن مجھے یہ گھر اپنے پاس رکھنا مناسب نہیں لگتا۔دوسری بات یہ کہ عمران خان پر الزام ہے کہ ان کی سیتا وائٹ سے مبینہ طور پر ایک بیٹی ہے۔اور جمائما خان اس بچی کی پرورش کر رہی ہیں۔اس لیے میں یہ ضرور کہوں گا کہ جمائما خان ایک گریس فل خاتون ہیں۔اور اگر جمائما خان کہتی ہیں کہ میں مسلمان ہوں تو وہ ہمارے لیے قابل احترام ہیں۔اور اگر وہ ایک یہودی خاندان سے ہیں تو بھی ہمارے لیے قابل احترام ہیں۔