وزیراعظم فاروق حیدرخان نے ایکٹ 1974 میں ترامیم کرکے حکومت آزاد کشمیر کو بااختیاربنایاہے ‘ وزیراعظم راجہ محمدفاروق حیدرخان کے اس اقدام سے کشمیریوں کے سرفخر سے بلند ہوگئے ہیں

مسلم لیگ (ن) تحصیل سماہنی کے صدرحاجی راجہ منیراللہ خان کی بات چیت

بدھ جون 16:07

میرپور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) مسلم لیگ (ن) تحصیل سماہنی کے صدرحاجی راجہ منیراللہ خان نے کہاہے کہ وزیراعظم راجہ محمدفاروق حیدرخان نے ایکٹ 1974 میں ترامیم کرکے حکومت آزاد کشمیر کو بااختیاربنایاہے ، وزیراعظم راجہ محمدفاروق حیدرخان کے اس اقدام سے کشمیریوں کے سرفخر سے بلند ہوگئے ہیں۔ کشمیرکونسل کاخاتمہ جیسے اقدام راجہ محمدفاروق حیدرخان کے علاوہ کسی کے بس کی بات نہیں تھی ۔

راجہ محمدفاروق حیدرخان حقیقی معنوں میں کشمیریوں کے مسیحا ہیں۔ راجہ محمدفاروق حیدرخان نے کشمیرکونسل سمیت 13 ویں آئینی ترامیم کرکے جواحسن اقدام اٹھایا ہے وہ تاریخ کااہم باب ہے۔ راجہ محمدفاروق حیدرخان سچے ،کھرے ،نڈر اور کشمیریوں کے مخلص لیڈر ہیں جو کہتے ہیں وہ کرکے دکھاتے ہیں۔

(جاری ہے)

ان خیالات کااظہار انھوں نے افطار ڈنر سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

حاجی راجہ منیراللہ خان نے کہاکہ راجہ محمدفاروق حیدرخان کے دلیرانہ فیصلوں سے کشمیریوں کے سرفخرسے بلند ہوئے ہیں۔ آزادکشمیرکے تمام حلقوں میں یکساں تعمیروترقی مسلم لیگ ن کی حکومت کی ہی بدولت ممکن ہوئی ہے۔اب آزادکشمیرکے اندراحساس محرومی ختم ہوچکاہے۔ سرکاری نوکریاںبلاتفریق امیروغریب کو میرٹ پرمل رہی ہیں۔ غریبوں اور اقلیتی برادری کے بچے بھی میرٹ پراعلیٰ عہدوں پرفائز ہورہے ہیں۔ مسلم لیگ ن کی حکومت نے دوسالوں میں 25 سالوں سے زیادہ کام کیے ہیں۔اب آزادکشمیرکے فیصلے آزادکشمیر میں ہی ہونگے۔۔مسلم لیگ ن اقتدار کی پوجاری نہیں تعمیروترقی اورمیرٹ پریقین رکھتی ہے اسی وجہ سے حکومت کوتاریخی کامیابیاں مل رہی ہیں۔

متعلقہ عنوان :