ملک کو درپیش پانی کے سنگین بحران کے پیش نظر سوشل میڈیا پر کالا باغ ڈیم کے متنازع منصوبہ کی ہر قیمت پر تعمیر کے حق میں مہم زور پکڑ گئی

بدھ جون 17:57

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) ملک کو درپیش پانی کے سنگین بحران کے پیش نظر سوشل میڈیا پر کالا باغ ڈیم کے متنازع منصوبہ کی ہر قیمت پر تعمیر کے حق میں مہم زور پکڑ گئی۔ مہم اتنی پرزور ہے کہ اس کے حق میں انتہائی پرجوش اعلانات کئے جا رہے ہیں اور سوشل میڈیا کے ذریعے کالا باغ ڈیم کی تعمیر کو قومی مفاد اور حب الوطنی سے جوڑا جا رہا ہے جبکہ یہ پیغامات بھی پھیلائے جا رہے ہیں کہ عوام اس جماعت کو ووٹ دیں جو ڈیم تعمیر کرنے کا وعدہ کرے۔

کالا باغ ڈیم کے حق میں جاری مہم میں نوجوان بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں جس کے نتیجے میں اس ڈیم کے فوائد اور نقصانات پر تکنیکی اور جذباتی ہر دو لحاظ سے بحث شروع ہو گئی ہے۔ اس مہم میں ڈیم کے حق میں اور اس کے خلاف سروے بھی شامل ہیں۔

(جاری ہے)

سو شل میڈیا کے صارفین ملک کو درپیش پانی سے متعلق مسائل کی سنگینی کے پیش نظر کالا باغ ڈیم کو پاکستان کی بقا کا معاملہ قرار دیتے ہوئے ہر طرح کے اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر اس ڈیم کی تعمیر پر اتفاق رائے پیدا کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

کالا باغ ڈیم سے متعلق پیش کئے جانے والے اعدادوشمار کے مطابق اس سے صوبہ سندھ اور خیبر پختونخوا کی ایک لاکھ ستر ہزار ایکڑ اراضی سیراب ہو سکے گی جبکہ اس سے 3600 میگا واٹ اضافی سستی بجلی بھی حاصل ہو سکے گی۔ واضح رہے کہ اس منصوبے کو قومی اتفاق رائے حاصل نہ ہونے کے باعث ترک کر دیا گیا تھا۔