نگران وزیراعظم کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس،سیکریٹری داخلہ کی عام انتخابات کے شفاف انعقاد اور اس حوالے سے کئے گئے اقدامات جبکہ نگران وزیر خزانہ کی ملکی معاشی صورتحال پر بریفنگ

طویل المدتی اسٹریکچرل ریفارمز پیکج کا منصوبہ تیار کیاجائے اور ایسی منظم اور ٹھوس حکمت عملی تیار کریں جو آئندہ منتخب حکومت کیلئے معاون ثابت ہو،نگران وزیراعظم ناصرالملک کی اجلاس میں ہدایت

بدھ جون 19:02

نگران وزیراعظم کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس،سیکریٹری داخلہ کی ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) نگران وزیراعظم ناصرالملک کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا پہلا اجلاس ہوا جس میں سیکریٹری داخلہ نے کابینہ کو عام انتخابات کے شفاف انعقاد اور اس حوالے سے کئے گئے اقدامات جبکہ نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر نے ملکی معاشی صورتحال پر بھی بریفنگ دی۔نگران وزیراعظم ناصرالملک نے اجلاس میں ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ طویل المدتی اسٹریکچرل ریفارمز پیکج کا منصوبہ تیار کیاجائے اور ایسی منظم اور ٹھوس حکمت عملی تیار کریں جو منتخب حکومت کے لیے معاون ثابت ہو۔

بدھ کووزیراعظم ہائوس اسلام آباد میں نگران وزیراعظم جسٹس(ر))ناصر الملک کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا ،جس میں وفاقی سیکریٹری داخلہ نے وزارت داخلہ کے امور، ملک کی داخلی سیکیورٹی اور امن وامان کی صورت حال پر بھی بریفنگ دی۔

(جاری ہے)

سیکریٹری داخلہ نے کابینہ کو عام انتخابات کے شفاف انعقاد کے لیے کیے جانے والے اقدامات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ پرامن انتخابات کے حوالے سے تعاون کررہے ہیں۔

کابینہ اجلاس میں نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر کو ملکی معاشی صورتحال پر بھی بریفنگ دی گئی اور اس موقع پر وزیر خزانہ نے بتایا کہ ملک میں ترقی کی شرح 6 فیصد ہے۔اجلاس میں کابینہ نے ہدایت دی کہ بیلینس آف پیمنٹس، فیسکل اور قرضوں کی ادائیگی کا جامع اور مستحکم نظام بنایاجائے۔اس موقع نگران وزیراعظم ناصرالملک نے ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ طویل المدتی اسٹریکچرل ریفارمز پیکج کا منصوبہ تیار کیاجائے اور ایسی منظم اور ٹھوس حکمت عملی تیار کریں جو منتخب حکومت کے لیے معاون ثابت ہو۔