جمعیت علماء اسلام چارسدہ کے ایک دھڑے نے ایم ایم اے کی ضلعی تنظیم کے فیصلوں کو مسترد کردیا

جیتی ہوئی قومی و صوبائی اسمبلی کی نشستوں کو دوسروں کی جھولی میں ڈالنے کی اجازت نہیں دی جائیگی، مولانا سید گوہر شاہ نے این اے 24اور پی کے 58،مولانا عبدالرئوف نے پی کے 59سے مولانا محمد ہاشم کیخلاف الیکشن لڑنا کا اعلان

بدھ جون 19:16

چارسدہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) جمعیت علماء اسلام چارسدہ کے ایک دھڑے نے متحدہ مجلس عمل کی ضلعی تنظیم کے فیصلوں پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے مسترد کرنے کا اعلان کردیا،،جمعیت علماء اسلام کی جیتی ہوئی قومی و صوبائی اسمبلی کی نشستوں کو دوسروں کی جھولی میں ڈالنے کی اجازت نہیں دی جائے گی،مولانا سید گوہر شاہ نے این اے 24اور پی کے 58جبکہ تحصیل امیر مولانا مفتی عبدالرئوف شاکر نے پی کے 59سے جمعیت علمائے اسلام کے ضلعی امیر مولانا محمد ہاشم خان کے خلاف آزاد حیثیت میں الیکشن لڑنے کا اعلان کر دیا ، بدھ کو اس حوالے سے دار الحفظ چارسدہ میں جمعیت علماء اسلام تحصیل چارسدہ کے اہم عہدہ داروں اور سرکردہ کارکنان کا اجلاس زیرصدارت مولاناعبدالرؤف شاکر امیر جمعیت علماء اسلام تحصیل چارسدہ منعقد ہو جس میں سابق ایم این اے مولانا سید گوہر شاہ نے بھی شرکت کی۔

(جاری ہے)

اجلاس میں متحدہ مجلس عمل ضلع چارسدہ کی ضلع تنظیم کی طرف سے آئندہ عام انتخابات کیلئے نشستوں کی غیرمنصفانہ تقسیم پر سخت برہمی اور رد عمل کا اظہار کیا گیا ۔اجلاس میں واضح کیا گیا کہ چارسدہ کی سطح پر جمعیت علماء اسلام کی وجودکو ختم کرنے کی خطرناک سازش ہورہی ہے اور جمعیت علماء اسلام اور اتحادیوں کی جیتی ہوئی قومی و صوبائی اسمبلی کے نشستوں این اے 24اور پی کی59,58,57 کو اپنی ذاتی خواہشات کیلئے دوسرے سیاسی پارٹی کی جھولی میں ڈالنے کا پروگرام بنایا گیا ہے ۔

اجلاس میں دھمکی دی گئی کہ اگر متحدہ مجلس عمل کی تنظیم راہ راست پر نہ آئی تو جمعیت علماء اسلام ہر ایک سیٹ پر امیدوار کھڑا کردے گی اور مجلس عمل کی ناکامی کی ساری ذمہ داری مجلس عمل کی ضلعی سربراہان پر عائدھوگی۔اس حوالے سے رابطہ کرنے پر جمعیت علمائے اسلام کے سابق رکن قومی اسمبلی مولانا سید گوہر شاہ نے بھی ٹکٹوں کے تقسیم کے حوالے سے ایم ایم اے کے فیصلوں پر شدید تحفظات کا اظہار کر تے ہوئے کہا کہ موجودہ ایم ایم اے چارسدہ میں جے یوآئی کی جیتی ہوئی نشستیں اے این پی کو طشتری میں پیش کر رہی ہے جو سیاسی اصولوں کے خلاف ہے ۔

انہوںنے کہا کہ وہ قومی وطن پارٹی اور اے این پی دونوں سے اتحاد کے خامی ہے تاکہ عمران خان کو ہر صورت ہرایا جا سکے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ این اے 24چارسدہ ٹو اور پی کے 58چارسدہ تھری سے انہوں نے آئندہ عام انتخابات میں حصہ لینے کیلئے کاعذات نامزدگی حاصل کر لی ہے ۔ دوسری طر ف جمعیت علمائے اسلام تحصیل چارسدہ کے امیر مفتی عبدالرئو ف شاکر نے متحدہ مجلس عمل سمیت دیگر جماعتوں کے خلاف آزاد حیثیت میں انتخابی میدان میں اترنے کا فیصلہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ پی کے 59سے آزاد حیثیت میں انتخاب لڑنے کیلئے کل کاعذات نامزدگی داخل کرینگے ۔ یاد رہے کہ پی کے 59سے جمعیت علمائے اسلام کے ضلعی امیر مولانا محمد ہاشم خان نے بھی کاعذات نامزدگی حاصل کی ہے ۔