اسرائیل ایک ناجائز ریاست ہے جو استعماری طاقتوں نے قائم کی ،سید ثاقب انور

یہود و انصار کبھی بھی مسلمانوں کے دوست نہیں ہو سکتے ، پروفیسر حافظ عبد الجلیل

بدھ جون 19:22

کوہاٹ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) ملی یکجہتی کونسل کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل سید ثاقب انور نے کہا کہ بیت المقدس مسلمانوں کو قبلہ اول اور فلسطین کا دارلحکومت ہے،،اسرائیل ایک ناجائز ریاست ہے جو استعماری طاقتوں نے قائم کی ہے۔ وہ ڈسٹرکٹ بار ایسوسیایشن کے زیرِ اہتمام یوم یکجہتی فلسطین کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ ثاقب اکبر نے کہا کہ 1948سے پہلے اسرائیل نام کی کوئی ریاست نہیں تھی،خلافتِ عثمانیہ کے خاتمے کے بعد بڑی طاقتوں نے اپنے علاقائی حواریوں کے ساتھ مل کر اور پوری دنیا سے یہودیوں کو اکھٹا کر کے اسرائیل کو سر زمین فلسطین پر مسلط کیا۔

انھوں نے کہا کہ اس مسئلے کا ایک ہی حل ہے اور وہ یہ کہ یہودی واپس گھروں کو جائیں اور فلسطینی واپس اپنے گھروں میں آکر آباد ہوں۔

(جاری ہے)

ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کوہاٹ کے صدر جاوید محمد پنجی نے مہمان گرامی اور شرکاء کا شکریہ ادا کیا اور کانفرنس کے اغراض و مقاصد سے شرکاء کو آگاہ کیا۔کانفرنس کے مہمان خصوصی چیف جسٹس ریٹائرڈ سیدابنِ علی تھے۔

کانفرنس کی صدارت سینئر سول جج کوہاٹ نے کی۔تحریک منہاج القرآن کے ڈویژنل امیر پروفیسر حافظ عبد الجلیل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہود و انصار کبھی بھی مسلمانوں کے دوست نہیں ہو سکتے اور اس میں مسلمانوں کا سب سے بڑا المیہ نا اتفاقی ہے اور اسی نا اتفاقی کی وجہ سے کشمیر اور فلسطین کے مسائل حل نہیں ہو رہے اور ان مسائل کا حل ہونا تبھی ممکن ہے جب مسلمانوں سے فرقہ واریت کا خاتمہ ہو جائے۔کانفرنس میں بری تعداد میں وکلاء اور سیاسی جماعتوں کے اکابرین نے شرکت کی۔