چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں پشاور رجسٹری میں مختلف کیسز کی سماعت

بدھ جون 21:58

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں پشاور رجسٹری میں ..
پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں پشاور رجسٹری میں مختلف کیسز کی سماعت ،، چیف جسٹس نے نگران وزیر اعلی جسٹس (ر) دوست محمد خان سے فوری طور پر عدلیہ کی تمام گاڑیاں واگزار کرانے، صوبے کے تمام ایم ٹی آئی ہسپتالوں کے بورڈ آف گورنر ز کے تحلیل کرنے اور میڈیکل کالجوں کو مقررہ فیسوں سے زائد نہ لینے کے احکامات جاری کر دیئے ۔

چیف جسٹس ثاقب نثار ایک روزہ دورے پر پشاور پہنچے ، جہاں انہوں نے سپریم کورٹ پشاور رجسٹری میں اہم کیسز کی سماعت کی، چیف جسٹس نے نگران وزیر اعلی کا حلف اٴْٹھانے والے سپریم کورٹ کے سابق جج جسٹس دوست محمد خان سے فوری طور پر عدلیہ کی تمام گاڑیاں لینے کا حکم جاری کیا ۔۔عدالت نے صوبے کے تمام غیر متعلقہ افراد سے گاڑیاں واپس لینے کے احکامات بھی جاری کیے۔

(جاری ہے)

عدالت میں صوبے میں بجلی منصوبوں کے حوالے سے کیس کی سماعت بھی ہوئی پیسکو چیف محمد امجد عدالت میں پیش ہوئے جبکہ پرائیویٹ میڈیکل کالجز کیس کی سماعت کے دوران ایف آئی اے نے میڈیکل کالجز کے حوالے رپورٹ پیش کی گئی ۔۔پشاور میں چیک پوسٹو ںکے خاتمے کے حوالے سے بھی کیس کی سماعت ہوئی ، آئی جی خیبر پختونخوا صلاح الدین عدالت میں پیش ہوئے رپورٹ کے مطابق پشاور میں 84 چیک پوسٹوں میں پولیس کی 59 اور آرمی کی 25 چیک پوسٹیں تھیں جس میں پولیس کی 36 اور آرمی کی 7 چیک پوسٹیں ہٹا دیں گئیں۔