ریحام خان کی کتاب کی ایک اور متنازعہ تحریر سامنے آ گئی

میڈیا والے مجھے محترمہ فاطمہ جناح اور بے نظیر بھٹو سے ملا رہے تھے،ریحام خان کا دعویٰ

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس بدھ جون 19:45

ریحام خان کی کتاب کی ایک اور متنازعہ تحریر سامنے آ گئی
اسلام آباد (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار-06 جون 2018ء) ::ریحام خان کی کتاب کی ایک اور متنازعہ تحریر سامنے آ گئی۔۔عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان نے دعویٰ کیا ہے کہ میڈیا والے مجھے محترمہ فاطمہ جناح اور بے نظیر بھٹو سے ملا رہے تھے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان نے ایک کتاب لکھی ہے جس میں عمران خان اور ان کی ذاتی زندگی سے متعلق کئی اہم انکشافات بھی کیے گئے ہیں۔

۔۔ریحام خان نے اس کتاب میں نہ صرف عمران خان بلکہ عمران خان کی قریبی شخصیات پر بھی سنگین نوعیت کے الزامات عائد کیے ہیں۔جب کہ پی ٹی آئی نے بھی ریحام خان پر کئی الزامات عائد کیے ہیں اور کہا ہے کہ اس کتاب کے پیچھے پاکستان مسلم لیگ ن ہے۔۔ن لیگ نے عمران خان کی ساکھ کو متاثر کرنے کے لیے یہ کتاب لکھوائی ہے۔

(جاری ہے)

اس کتاب نے جہاں ریحام خان نے بہت سی متنازعہ باتیں کی ہیں وہیں ریحام خان نے مذہبی اور تفرقہ پسندی کو بھی ہوا دینے کی کوشش کی ہے۔

اپنی کتاب میں انہوں نے کہا کہ میں سنی دیو بندی پس منظر سے تھی اس لیے پاکستان تحریک انصاف کی شیعہ قیادت مجھے پسند نہیں کرتی تھی اس لئیے انہوں نے مجھے طلاق دلوا دی ۔اس ضمن میں انہوں نے شاہ محمود قریشی،، شیریں مزاری ،عارف علوی اور علی زیدی کے نام لئیے ہیں۔اس کتاب کے مندرجات گاہے بگاہے سامنے آ رہے ہیں۔۔ریحام خان کی کتاب کی ایک اور متنازعہ تحریر سامنے آ گئی۔

اس حوالے سے ریحام خان نے ایک اور دعویٰ کیا ہے۔ ریحام خان کا کہنا ہے کہ جب میری عمران خان سے شادی ہوئی تھی تو اسی میڈیا نے مجھے سر پر بٹھا لیا تھا ۔انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ میڈیا والے انہیں مادر ملت فاطمہ جناح اور شہید جمہوریت بے نظیر بھٹو سے ملا رہے تھے۔یاد رہے کہ گزشتہ سال پاکستان تحریک انصاف کے رہنما نے ریحام خان کو مادر ذلت کا خطاب دیا تھا۔رہنما تحریک انصاف فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ ریحام خان عمران خان سے شادی کر کے مادرِ ملت بننے کے لیے آئی تھیں لیکن دولت اور شہرت کے حصول نے انہیں ’مادرِ ذلت بنا دیا۔