جماعت اسلامی انتخابات میں جیت کر غیر طبقاتی نظام تعلیم کو ختم کرکیتعلیمی بجٹ میں اضافہ کیا جائے گا، زاہدا ختر بلوچ

مہلک بیماریوں کا ملک گیر مفت علاج تحصیل و ضلعی سطحوں کے ہسپتالوں کو اپ گریڈ کیا جائے گا،تعلیم ، روزگار، کھیل کی پالیسی سازی میں نوجوانوں کے لیے قابل اعتماد اقدامات کیے جائیں گے،صوبائی نائب امیر جماعت اسلامی

بدھ جون 22:56

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) جماعت اسلامی کے صوبائی نائب امیر زاہدا ختر بلوچ نے کہا کہ جماعت اسلامی انتخابات میں جیت کر غیر طبقاتی نظام تعلیم کو ختم قومی و علاقائی زمینوں کی ترقی اور اعلٰی تعلیم کے لیے طلباء و طالبات کو یکساں مواقع فراہم کرتے ہوئے تعلیمی بجٹ میں اضافہ کیا جائے گا ہر ضرورت مند کے لیے دل ، جگر، سرطان، تپ دق سمیت پانچ مہلک بیماریوں کا ملک گیر مفت علاج تحصیل و ضلعی سطحوں کے ہسپتالوں کو اپ گریڈ کیا جائے گا تعلیم ، روزگار، کھیل کی پالیسی سازی میں نوجوانوں کے لیے قابل اعتماد اقدامات کیے جائیں گیانہوں نے کہاکہ اسلام اور آئین کی روشنی میں خواتین کی شرکت و ترقی کے لیے تعلیم وروزگار کے دائروں میں خواتین کے لیے انقلابی سکیمیں جاری کی جائیں گی اور عورتوں کے استحصال اور عدم مساوات کے روریوں کی بیخ کنی کی جائے گی ملکی ترقی میں بیرون ملک پاکستانیوں کی شرکت کی حوصلہ افزائی ، اندرون ملک اثاثوں کا تحفظ اور سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کی جائے گی اقلیتوں کی جان مال عبادت گاہوں کا مکمل تحفظ تعلیم روزگار شہری حقوق کی ضمانت اور ان کے پرسنل لاز اور مذہبی رسوم کا احترام کیا جائے گا پاکستان کی آزادی سلامتی استحکام اور اسلامی تشخص کے لیے مشترکہ جدوجہد کریں گے ہمارا اصل ہدف ملک میں اسلامی جمہوری بنیادوں پر نظام مصطفٰی کا قیام اسلامی اقدار و قوانین بالخصوص عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت ؐ کے قانون کا مکمل تحفظ کیا جائے گا آزادی کشمیر کے لیے جدوجہد کی جائے گی پاکستان کی نظریاتی و جغرافیائی سرحدوں قومی آزادی وخودمختاری کا تحفظ اور ہر قسم کی بیرونی مداخلت کا سدباب کیا جائے گا کرپشن فری پاکستان کے ہدف کے لیے ٹھوس اقدامات کریں گے قانون کی حکمرانی کو یقینی بناتے ہوئے ریاستی ظلم و جبر کا خاتمہ کیا جائے گا اور ہر فرد کے بنیادی حقوق کے تحفظ کی ضمانت دی جائے گی ہر طرح کی سیاسی معاشی معاشرتی کرپشن کا مکمل سدباب کیا جائے گا حکمرانوں ، منتخب نمائندوں، عدلیہ ، افواج اور انتظامیہ کا بلا امتیاز اور بے لاگ احتساب ہو گا متحدہ مجلس عمل بر سر اقتدار آکر ہر شہری کے لیے خوراک ، لباس، مکان، تعلیم ، علاج ، روزگار کی ضمانت کو یقینی بنائے گی ہماری حکومت کوئی نیا غیر ملکی قرضہ نہیں لے گی سودی نظام کا مکمل اور کم مدت میں خاتمے کو یقینی بنائیں گے قومی خزانے اور وسائل کے ناجائز استعمال کو روکا جائے گابجٹ کے غیر ترقیاتی اخرجات میں 30فیصد کمی کی جائے گی جمعتہ المبارک کی چھٹی بحال کی جائے گی اتحاد امت اور معاشرتی مصالحتی کردار کے لیے مسجد کو مرکزیت حاصل ہو گی امر بالمعروف ونہی عن المنکر کے ادارے کا قیام عمل میں لایا جائے گا صحت کے شعبے کے بجٹ کو دگنا کریں گے۔