امریکی میڈیکل انشورنس پروگرام قبل از وقت دیوالیہ ہوسکتا ہے، جرمن نشریاتی ادارے کی رپورٹ

جمعرات جون 11:04

واشنگٹن۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء) امریکا کے سب سے بڑے میڈیکل انشورنس پروگرام کے لیے اندازوں سے پہلے ہی سرمایہ ختم ہو جائے گا، جبکہ ریٹائرڈ امریکی شہریوں کے لیے مرکزی ویلفیئر پروگرام کو بھی غیر یقینی صورتحال کا سامنا ہے۔۔جرمن نشریاتی ادارے کے مطابق امریکی وزارت خزانہ کے عہدیداروں نے تصدیق کی ہے کہ ٹیکس کی مد میں ہونے والی کٹوتیوں کے بعد ہیلتھ کیئر کے جاری دونوں پروگراموں کو مشکلات کا سامنا ہے۔

تاہم وزیر خزانہ سٹیو منوچِن کے مطابق بہتر شرح پیداوار سے جاری ہیلتھ کیئر کے پروگرام طویل مدت کے لیے دیوالیہ پن سے بچ سکتے ہیں۔تازہ اعداد و شمار کے مطابق میڈیکل کیئر کا ٹرسٹ فنڈ ممکنہ طور پر 2026ء میں ہی دیوالیہ ہو سکتا ہے۔ اس پروگرام کے تحت تقریباً 60 ملین امریکی شہریوں کو ہیلتھ انشورنس فراہم کی گئی ہے اور ان میں سے زیادہ تر افراد کی عمریں 65 برس سے زیادہ ہیں۔

(جاری ہے)

اسی طرح ریٹائرڈ امریکی شہریوں کے لیے مرکزی ویلفئر پروگرام اور سوشل سکیورٹی سسٹم کو بھی غیر یقینی صورتحال کا سامنا ہے۔گزشتہ روز جاری کی گئی ایک دوسری رپورٹ کے مطابق امریکا کا یہ مرکزی پروگرام بھی 2034ء میں دیوالیہ ہو جائے گا۔ امریکا میں تقریبا پینتالیس ملین ریٹائرڈ اور چھ ملین دیگر افراد سوشل سکیورٹی کے نظام سے مستفید ہو رہے ہیں۔دوسری جانب امریکی وزیر خزانہ سٹیون منوچِن نے یقین دہانی کروائی ہے کہ کسی نہ کسی طریقے سے ان دونوں بڑے مرکزی امریکی پروگراموں کو دیوالیہ ہونے سے بچا لیا جائے گا۔

متعلقہ عنوان :