پاکستانی نژاد برطانوی مصنفہ کاملہ شمسی نے 2018ء کا ویمن پرائز فار فکشن جیت لیا

جمعرات جون 12:00

لندن۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء)پاکستانی نژاد برطانوی مصنفہ کاملہ شمسی نے 2018ء کا ویمن پرائز فار فکشن جیت لیا۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق یہ کاملہ شمسی کا ساتواں ناول ہے اور یہ تیسری بار ہے کہ پاکستانی نژاد برطانوی مصنفہ کو ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔اس سے پہلے انھیں بیلز پرائز اور اورنج پرائز کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔

ہوم فائر سوفوکلیز کے یونانی المیے کی ایک نئی شکل ہے۔ یہ ناول بنیاد پرستی اور خاندانی وفاداریوں کے بارے میں ہے۔

(جاری ہے)

ججز میں شامل سارہ سینڈز کا کہنا تھا کہ پینل نے اس کتاب کو اس لیے چنا کیونکہ یہ ہمارے وقت کے بارے میں بات کرتی ہے۔انھوں نے کہا کہ ہوم فائر شناخت، وفاداریوں میں تصادم، محبت اور سیاست کے بارے میں ہے۔ اور اس نے اپنی مہارت کو برقرار رکھا ہے۔ایوارڈ کی میزبانی اس کی بانی مصنفہ کیٹ موسی نے سینٹرل لندن میں کی۔واضح رہے کہ یہ ایوارڈ ہر سال ایسی مصنفہ کو دیا جاتا ہے جن کے بارے میں ججز سمجھتے ہیں کہ ان کا ناول انگریزی زبان میں اس سال کا سب سے بہترین ناول ہے۔اس ایوارڈ کا آغاز1996ء میں ہوا،اس مقابلے کو جیتنے والی مصنفہ کو 30 ہزار برطانوی پاؤنڈز ملتے ہیں۔