پاکستان کی سیاست میں جنسی استحصال عام ہے! ریحام خان

کتاب میں جنس کو سیاست کے لیے استعمال کرنے کے واقعات کا ذکر ہے،جن میں سے کچھ واقعات کا تعلق پی ٹی آئی سے ہے،ریحام خان کا بھارتی ٹی وی کو دئیے گئے انٹرویو میں انکشاف

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعرات جون 12:27

پاکستان کی سیاست میں جنسی استحصال عام ہے! ریحام خان
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔07 جون 2018ء) پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کی دوسری سابقہ اہلیہ ریحام خان کی کتاب نے سوشل میڈیا پر ایک طوفان برپا کر دیا ہے۔ سوشل میڈیا پر ریحام خان کی کتاب سے متعلق کئی انکشافات ہوئے جنہوں نے نئی بحث چھیڑ دی ہے۔قومی اخبار کی ایک رپورٹ کے مطابق ریحام خان نے ایک بھارتی ٹی وی کو انٹر ویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ میری کتاب میں سیاسی مرتبے کیلئے جنس کے استعمال کرنے واقعات ہیں جس میں کچھ واقعات کا تعلق پی ٹی آئی سے ہے۔

ریحام خان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کی سیاست میں جنسی استحصال عام ہے۔ٹاپ پوزیشن پر بیٹھے ہوئے افراد سب جانتے ہوئے بھی آنکھیں بند کر لیتے ہیں۔۔ریحام خان نے کہا کہ میری کتاب کو سیاسی شخصیات سے منسوب کرنا کتاب کی توہین ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے مزید کہا کہ انتخابات سے پہلے کتاب کا آنا مشکل لگ رہا ہے۔ کتاب میاں بیوی کی نہیں بلکہ میری کہانی ہے۔

ریحام خان کا کہنا تھا کہ شادی اس طرح نہیں چلتی جیسے لوگ سمجھتے ہیں۔اور میں نےا پنی طلاق کی وجہ بھی اس کتاب میں لکھ دی ہے۔۔ریحام خان نے اپنے سابق شوہر سے متعلق کہا کہ عمران خان کبھی لبرل تو کبھی اسلامک ایجنڈے پر چل نکلتے ہیں۔۔ریحام خان نے بھارتی ٹی وی کو انٹرویو کے دوران ایک واقعہ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایک بار عمران خان اور میرے درمیان تلخی ہوئی تھی جس کے بعد عمران خان نے میرے پاؤں پکڑ لیے تھے اور کہا کہ میں بہت بیوقوف شخص ہوں۔

ریحام خان نے کہا کہ جب میڈیا والے مجھے فاطمہ جناح اور بے نظر بھٹو سے ملاتے تھے تو عمران خان ایسی خبروں کا بلیک آئوٹ کر رہے تھے۔یاد رہے کہ ریحام خان نے اپنی کتاب میں عمران خان کے قریبی ساتھیوں زلفی بخاری ، وسیم اکرم اور انیلہ خواجہ پر جنسی نوعیت کے الزامات عائد کیے ہیں۔ اپنی کتاب میں ریحام خان نے اپنے سابق شوہر اعجاز رحمان پر بھی الزامات عائد کیے۔ ان چاروں افراد کی جانب سے ریحام خان کو قانونی نوٹس بھجوا دیا گیاہے۔