عراقی الصدر شہر کی مسجدکے گودام میں بم دھماکہ،

آٹھ افراد ہلاک،27 زخمی بارودی مواد اس وقت پھٹ گیا جب اسے ایک گاڑی کے ذریعے وہاں سے لے جایا جا رہا تھا،عراقی وزارت داخلہ

جمعرات جون 13:33

بغداد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء) عراقی پولیس نے کہاہے کہ النصر شہر میں ہونے والے ایک بم دھماکے کے نتیجے میں کم سے کم آٹھ افراد ہلاک اور 27 زخمی ہوگئے۔دھماکہ اسلحہ کے ایک گودام میں ہوا اور پولیس نے واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں۔عرب ٹی وی کے مطابق یہ واقعہ الصدر شہرمیں پیش آیا۔بم دھماکے کے نتیجے ہونے والی تباہی اور مقتولین کے لواحقین کو غم اور صدمے سے آہ و بکاء کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔

(جاری ہے)

عراقی وزارت داخلہ کے ترجمان نے ایک بیان میں بتایا کہ دھماکہ اسلحہ کے ایک گودام میں ہوا اور پولیس نے واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں۔۔پولیس ذرائع کے مطابق دھماکہ خیز مواد ایک مسجد کے گودام میں رکھا گیا تھا۔ بارودی مواد اس وقت پھٹ گیا جب اسے ایک گاڑی کے ذریعے وہاں سے لے جایا جا رہا تھا۔خیال رہے کہ الصدر شہر سرکردہ مذہبی اور سیاسی رہ نما مقتدیٰ الصدر کا آبائی شہر ہے۔ مقتدیٰ الصدر نے حالیہ پارلیمانی انتخابات میں غیرمعمولی کامیابی حاصل کی تھی۔