سپریم کورٹ کانندی پور پاور پلانٹ کرپشن میں نیب کو رحمت حسین جعفری کمیشن رپورٹ کی روشنی میں تحقیقات کا حکم

نندی پور پاور پلانٹ میں فراڈ کو باریک بینی سے دیکھنا چاہتے ہیں‘جسٹس ثاقب نثار کے ریمارکس

جمعرات جون 14:10

سپریم کورٹ کانندی پور پاور پلانٹ کرپشن میں نیب کو رحمت حسین جعفری کمیشن ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء) سپریم کورٹ نے نندی پور پاور پلانٹ کرپشن میں نیب کو رحمت حسین جعفری کمیشن رپورٹ کی روشنی میں تحقیقات کا حکم دے دیا‘ چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ نندی پور پاور پلانٹ میں فراڈ کو باریک بینی سے دیکھنا چاہتے ہیں۔ جمعرات کو سپریم کورٹ میں نندی پور پاور پلانٹ کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے نیب کو نندی پور پاور پلانٹ کرپشن کی تحقیقات کا حکم دے دیا۔

(جاری ہے)

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ نیب رحمت حسین جعفری کمیشن رپورٹ کی روشنی میں تحقیقات کرے۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ رپورٹ میں جنہیں ذمہ دار ٹھہرایا گیا ان کے خلاف کیا کارروائی ہوئی۔ نندی پور پاور پلانٹ میں فراڈ کو باریک بینی سے دیکھنا چاہتے ہیں نندی پور پاور پلانٹ کے لئے بھرتی ملازمین وک دوسری جگہ بھیج دیا گیا ‘ نندی پور پاور پلانٹ کو آئوٹ سورس کردیا گیا۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ نندی پور پلانٹ کب شروع ہوا تخمینہ کتنا تھا اور کتنے میں مکمل ہوا سیکرٹری توانائی ڈویژن نے بتایا کہ نندی پور پاور پلانٹ 2007 میں 22ارب تخمینے پر شروع ہوا منصوبہ 58 ارب روپے میں مکمل ہوا۔