انتہا پسندی کے خلاف صلاحیتوں کو جدید خطوط پر استوار کیا جائے ، مشترکہ حکمت عملی تشکیل دی جائے،چین

جمعرات جون 15:35

بیجنگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء) چین کی خواہش ہے کہ انتہا پسندی سے نمٹنے کے لیے اپنی صلاحیت کو زیادہ بہتر بنایا جائے،شدت پسندی کے خلاف اتحادی ممالک کے ساتھ مشترکہ حکمت عملی تشکیل دی جائے گی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق چین کی کوشش ہے کہ انتہا پسندی سے نمٹنے کے لیے اپنی صلاحیت کو زیادہ بہتر بنایا جائے۔

(جاری ہے)

ویک اینڈ پر شنگھائی کوآپریشن آرگنائزشن (ایس سی او)کی سمٹ کے دوران بیجنگ حکومت اپنے اتحادی ممالک بشمول روس کے ساتھ مل کر اس تناظر میں ایک نئی مشترکہ حکمت عملی تیار کرنے کی کوشش کرے گی۔

پاکستان اور بھارت بھی اس علاقائی اتحاد کے ممبران ہیں جبکہ ایران بطور مبصر اس آرگنائزشن کا حصہ ہے۔ ریڈیکل اسلام اور دیگر علاقائی مسائل سے نمٹنے کی خاطر سن دو ہزار ایک میں اس تنظیم کی بنیاد رکھی گئی تھی۔ فی الحال یہ علاقائی گروہ اسلامک اسٹیٹ کے ایسے ممبران پر توجہ مرکوز کرنا چاہتا ہے، جو شام اور عراق سے واپس اپنے ممالک لوٹ رہے ہیں۔