لاہور ہائیکورٹ ، قصور میں عدلیہ مخالف ریلی نکالنے والے دو ملزمان کی درخواست ضمانت پر نوٹس جاری، مقدمے کا ریکارڈ طلب کر لیا گیا

جمعرات جون 19:37

لاہور۔7 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء) لاہور ہائیکورٹ نے قصور میں عدلیہ مخالف ریلی نکالنے والے دو مبینہ ملزمان ناصر خان اور جمیل خان کی درخواست ضمانت پر پراسیکیوٹر جنرل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے مقدمے کا ریکارڈ طلب کر لیا۔

(جاری ہے)

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس سردار شمیم کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے درخواست ضمانت کی سماعت کی، ملزمان کے وکیل راو جاوید الحق خاں نے عدالت کو بتایا کہ پولیس نے بدنیتی پردونوں ملزمان کو توہین عدالت کے مقدمے میں نامزد کیا، پولیس اپنی تفتیش مکمل کر چکی ہے، دونوں ملزمان بے گناہ پائے گئے، انہوں نے کہا کہ پولیس نے مقدمے میں بلاجواز دہشت گردی کی دفعات شامل کیں، انہوں نے استدعا کی کہ عدالت دونوں ملزمان کی ضمانتیں منظور کرے، جس پر عدالت نے پراسیکیوٹر جنرل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے مقدمے کا ریکارڈ طلب کر لیا، عدالت نے کیس کی مزید سماعت بیس جون تک ملتوی کر دی۔