ن) لیگ ،تحریک انصاف نے نگران سیٹ اپ کو ساس بہو کے جھگڑے کا ڈرامہ بنا رکھا ہے‘پیپلز پارٹی پنجاب

ایسی جماعتیں جن میں فیصلے کرنے کی صلاحیت نہیں وہ ملک کیسے چلائیں گی‘سیکرٹری اطلاعات چوہدری منظور کا ردعمل پی ٹی آئی ،(ن) لیگ نے ہمیں اعتماد میں نہیں لیا، حسن عسکری کی تقرری پر تحفظات ہیں‘عزیز الرحمن چن ،ثمینہ خالد گھرکی کی پریس کانفرنس

جمعرات جون 20:14

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء) پیپلز پارٹی پنجاب نے کہا ہے کہ (ن) لیگ اور تحریک انصاف نے نگران سیٹ اپ کو ساس بہو کے جھگڑے کا ڈرامہ بنا رکھا ہے، ایسی جماعتیں جن میں فیصلے کرنے کی صلاحیت نہیں وہ ملک کیسے چلائیں گی۔ ان خیالات کا اظہار پیپلز پارٹی پنجاب کے سیکرٹری اطلاعات چوہدری منظوری نے پنجاب کے نگران وزیراعلی کی نامزدگی پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کیا ۔

چوہدری منظور نے کہا کہ پنجاب میں آئینی عمل کو مزاق بنایا ہوا ہے، وفاق اور سندھ جہاں پی پی تھی وہاں معاملات احسن طریقے سے نمٹا دیئے گئے مگر جہاں جہاں (ن) لیگ اور تحریک انصاف کا زیادہ کردار تھا وہاں تماشا ہوا، ایسی جماعتیں جن میں فیصلے کرنے کی صلاحیت نہیں وہ ملک کیسے چلائیں گی، ان دونوں جماعتوں نے جمہوری اور سیاسی قوتوں کو بدنام کر رکھا ہے۔

(جاری ہے)

علاوہ ازیں پیپلزپارٹی لاہور کے صدر عزیز الرحمن چن نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ نگران وزیراعلی پنجاب کے معاملے پر پی ٹی آئی اور مسلم لیگ (ن) نے ہمیں اعتماد میں نہیں لیا، حسن عسکری کی تقرری پر تحفظات ہیں۔جبکہ شعبہ خواتین پنجاب کی صدر ثمینہ گھرکی نے کہا کہ امید ہے کہ الیکشن شفاف ہوں گے لیکن نگران وزیراعلی پنجاب پر تحفظات ہیں۔اس موقع پر پی پی 158 سے تحریک انصٓف کے سابق صوبائی اسمبلی کے امیدوار طاہر مجید نے پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کرتے ہوئے کہا ک پی ٹی آئی کی مقامی قیادت صرف سرمایہ کاروں کو عزت دیتی ہے۔