اسپاٹ فکسنگ میں سزا یافتہ پاکستانی پیسر محمد آصف امریکہ میں نئی راہیں تلاش کرنے لگے

امریکہ میں پاکستانی کمیونٹی کرکٹ میں خصوصی دلچسپی لے رہی ہے، میرا مشاہدہ ہے پاکستانی ہر جگہ بہترین کرکٹ کھیل رہے ہیں‘ گفتگو

جمعرات جون 20:24

اسپاٹ فکسنگ میں سزا یافتہ پاکستانی پیسر محمد آصف امریکہ میں نئی راہیں ..
نیو یارک (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 جون2018ء) اسپاٹ فکسنگ میں سزا یافتہ پاکستانی پیسر محمد آصف امریکہ میں نئی راہیں تلاش کرنے لگے۔جنوبی ایشیا اورکرکٹ کھیلنے والے دیگر ممالک سے ہجرت کرکے آ بسنے والے لوگ امریکہ میں بھی کھیل کو فروغ دینے کے لئے کوشاں ہیں، یہاں سیکڑوں کی تعداد میں کلبز قائم ہوچکے اوران کے درمیان نہایت اعلی معیار کی کرکٹ کھیلی جاتی ہے۔

محمد آصف بھی لیگ کھیلنے کے لئے یہاں آئے ہوئے ہیں، انہیںتوقع ہے کہ جلد امریکہ میں بھی بین الاقوامی مقابلوں کا آغاز ہوگا۔مقامی نشریاتی ادارے کو انٹرویو میں انہوںنے کہا کہ امریکہ میں پاکستانی کمیونٹی کرکٹ میں خصوصی دلچسپی لے رہی ہے، ورجینیا آنے سے قبل میں کیلی فورنیا گیا تھا، میرا مشاہدہ ہے کہ پاکستانی ہر جگہ بہترین کرکٹ کھیل رہے ہیں۔

(جاری ہے)

دیگر موضوعات پر بات چیت کرتے ہوئے محمد آصف نے کہاکہ اگر پاکستان میں سلیکشن کا معیار ہی پی ایس ایل بن گئی تو وہاں ٹیسٹ کے کھلاڑی کہاں سے ملیں گے، اگر ٹیسٹ میچزجیتنا ہیں تو ملک میں گراس روٹ پر کھیل کو فروغ دینا ہوگا۔محمد آصف نے کہا کہ ٹیم کو معلوم ہونا چاہیے تھا کہ وہ انگلینڈ کے ہوم گرائونڈ پر ٹیسٹ کھیلنے جا رہے ہیں جہاں سخت مقابلے کا سامنا ہوگا، اس میں کوئی شک نہیں کہ پہلے ٹیسٹ میں پاکستانی ٹیم نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا لیکن دوسرے میچ میں ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ غلط تھا، ہمیں اپنی بولنگ پر اعتماد کرنا چاہیے تھا۔

ایک سوال پر آصف نے کہا کہ پاکستان میں سکیورٹی صورتحال بہتر ہوچکی،توقع ہے کہ جلد مزید بین الااقوامی کرکٹ کھیلی جائے گی، پاک بھارت مقابلے بھی ہونے چاہئیں کیونکہ یہ دونوں ممالک کے عوام کی خواہش ہے، محض سیاست کی وجہ سے کرکٹ نہیں ہورہی حالانکہ جب کبھی باہمی مقابلے ہوں پوری دنیا کی توجہ ان پر ہوتی ہے۔