مشہوریورپی فوٹوگرافرکی مقبوضہ کشمیر بارے تصاویر سے نہتے کشمیریوں پر بھارتی ظلم و تشدد اجاگر ہو گا ،علی رضاسید

جمعہ جون 12:04

برسلز(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 جون2018ء) کشمیرکونسل یورپی یونین کے چیئرمین علی رضا سید نے مقبوضہ کشمیرمیں نہتے کشمیریوں پر مظالم کے بارے میں مشہور یورپی فوٹوگرافر کی شائع ہونے والی تصاویر کاخیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان تصاویر سے دنیا بھر میں مقبوضہ کشمیرمیںنہتے عوام پر بھارتی ظلم و تشدد کواجاگر کرنے میں مدد ملے گی۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق علی رضا سید نے برسلز سے جاری ایک بیان میں کہا کہ عالمی شہرت کے حامل چینل نیشنل جیو گرافیک کی ویب سائٹ نے فرنچ بلج فوٹو گرافر ’’سدریک گربے ہائے‘‘ کی مقبوضہ کشمیر سے لی گئی تصاویر کو شائع کیا ہے جن کے ذریعے فوٹو گرافر نے بندوق کے سائے میں بسنے والے نہتے کشمیریوں کودرپیش مشکلات اور ان پر ڈھائے جانیوالے مظالم کواجاگر کرنے کی کوشش کی ہے۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ ان تصاویر میں دکھایا گیا ہے کہ کس طرح مقبوضہ کشمیرکے معصوم لوگ شدید گھمبیر حالات میں آزادی کی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں اور اس دوران انہیں کن تکالیف اور مظالم کا سامنا کرناپڑتا ہے۔انہوںنے کہاکہ تصاویر پیغام کی ترسیل کا ایک اہم ذریعہ ہے اور مقبوضہ کشمیر سے لی گئی یہ تصاویر مقبوضہ علاقے کے لوگوں کی ذہنی اذیت کو دنیا تک پہنچانے میں مدد فراہم کریں گی۔

انہوںنے کہاکہ جب تک کشمیری عوام کو انکابنیادی حق ، حق خودارادیت نہیں دیاجاتا اس وقت تک کشمیریوں کے اس درد کا کوئی علاج نہیں ۔تاہم انہوںنے کہاکہ عالمی برادری اور مہذب ممالک کشمیریوں سے یکجہتی اور ہمدردی ظاہر کرکے ان کے دکھ و درد کو کم کرسکتی ہیں۔علی رضا سید نے کہاکہ سدریک گربے ہائے نے مقبوضہ کشمیرسے لی گئی اپنی تصاویر کے ذریعے دنیا کو نہتے کشمیریوں کی دکھ اور درد کی داستان بتانے کی کوشش کی ہے۔

کشمیر کونسل کے چیئرمین نے کہاکہ مسئلہ کشمیر گزشتہ سات دہائیوں سے اقوام متحدہ کے ایجنڈے پر موجود ہے لیکن کشمیریوں کو ابھی تک انصاف نہیں مل سکاہے۔انہوںنے کہاکہ بھارتی فورسز مقبوضہ علاقے میں نہتے کشمیری عوام کو اپنا حق خوداردیت مانگنے پر بدترین ظلم و تشدداور انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کا نشانہ بنا رہی ہیں۔انہوںنے کہاکہ مقبوضہ علاقے میں نہتے کشمیریوںکا قتل عام جاری ہے ، ہزاروں کی تعداد میں کشمیریوں کو حراست کے دوران لاپتہ کردیاگیا ہے اور فورسز اہلکارکشمیری خواتین کی بے حرمتیوں کو ایک جنگی ہتھیار کے طورپر استعمال کر رہی ہیں۔

انہوںنے افسوس ظاہر کیاکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کے مظالم دن بدن بڑھ رہے ہیںاور کشمیریوں کا کوئی پرسان حال نہیں۔ انہوںنے کہاکہ کشمیریوںکو اظہار رائے کی آزادی پرقدغن عائد ہے جبکہ انہیںپر امن احتجاج کی بھی اجازت نہیں ہے ۔یاد رہے کہ بین الاقوامی شہرت یافتہ فوٹوگرافرسدریک گربے ہائے اس سے قبل کشمیرکونسل ای یو کے زیراہتمام یورپی پارلیمنٹ اور یورپین پریس کلب برسلز میں کانفرنسوں کے دوران بھی نہتے کشمیریوں پر بھارتی مظالم کے بارے میں اپنی تصاویر پیش کرچکے ہیں۔