13ویں آئینی ترمیم سے انتظامی و مالی اختیارات حاصل ہوئے ہیں ‘جس سے حکومت آزاد کشمیر کے وقار میں اضافہ ہوا اس کا سہرا وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان کے سر ہے، اُنہوں نے بھرپور جدوجہد کی

آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر سردار فاروق احمد طاہر کی بات چیت

جمعہ جون 15:24

مظفرآباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 جون2018ء) آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر سردار فاروق احمد طاہر نے کہا ہے کہ 13ویں آئینی ترمیم سے انتظامی و مالی اختیارات حاصل ہوئے ہیں جس سے حکومت آزاد کشمیر کے وقار میں اضافہ ہوا ہے۔ اس کا سہرا وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان کے سر ہے، اُنہوں نے بھرپور جدوجہد کی۔ سابق وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف سابق وزیر اعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی نے آزاد کشمیر حکومت کو با اختیار کرنے کا آئینی تحفہ دیا ہے اس پر ہم اُن کے شُکر گزار ہیں۔

ترقی کا اب نیا دور شروع ہو گا۔ پاکستان کے ساتھ ہمارے گہرے رشتے ہیں۔ افواج پاکستان ہمارے اور ہم اُن کے دست و بازو ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ جن ممبران اسمبلی و کشمیر کونسل نے آئینی ترامیم میں کردار ادا کیا ہے اُن کا نام تاریخ میں سنہرے حروف سے لکھا جائے گا۔

(جاری ہے)

اپوزیشن کا بھی کردار ہے جس کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتالیکن ایکٹ1974ء میں ترامیم کے حوالے سے بلا جواز تنقید کا کوئی قانونی و اخلاقی جواز نہیں۔

وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان صاف نیت شخصیت ہیں اس لیے رمضان المبارک کے مہینے میں اللہ پاک نے اُن کی غیبی مدد کی ہے۔ اب مالی لحاظ سے حکومت آزاد کشمیر کو استحکام حاصل ہو چُکا ہے۔ اس سے خطے میں مثالی تعمیر و ترقی ہو گی۔ تحریک آزادیء کشمیر سے ہماری حکومت غافل نہیں ۔ اب پہلے سے بڑھ کر کردار ادا کیا جائے گا اور ایک دن ضرور آئے گا جب خطہء کشمیر کا الحاق پاکستان سے کر کے تکمیل پاکستان کا خواب پور ا کیا جائے گا۔