پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز پہلی بار کیو ایس ورلڈ یونیورسٹی ریکنگ 2019ء میں دنیا کی اعلیٰ ترین 400 یونیورسٹیز میں شامل

جمعہ جون 18:02

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 جون2018ء) پاکستان انسٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز پہلی بار کیو ایس ورلڈ یونیورسٹی ریکنگ 2019ء میں دنیا کی اعلیٰ ترین 400 یونیورسٹیز میںآگیا ہے ۔ کیو ایس دنیا بھر میں معتمد رینکنگ سسٹم ہے۔ پاکستان انسٹیٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز نے پہلی بار یہ اعزاز حاصل کرکے ایک نئی تاریخ رقم کی ہے ۔

ایم آئی ٹی سٹینلورڈ اور ہاورڈ سب سے اوپر ہیں ۔ کیو ایس ورلڈ رینکنگ 7 جون 2018ء کو آفیشل ویب سائٹ پر جاری کی گئی ۔ کیو ایس کے مطابق پاکستان انسٹیٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز پاکستان کی مشہور یونیورسٹی ہے۔ پاکستان انسٹیٹیوٹ آف انجینرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز میں بی ایس، ایم ایس اور پی ایچ ڈی پروگرام پیش کئے جاتے ہیں۔

(جاری ہے)

پاکستان میں دیگر یونیورسٹیز کے مقابلہ میں پاکستان انسٹیٹیوٹ آف انجینئرنگ میں تجرباتی اور کمپیوٹر کی بہترین سہولیات ہیں، پاکستانی یونیورسٹیز میںآف انسٹیٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسزمیں تحقیقی معیار بین الاقوامی معیار کے برابر ہے۔

پاکستان انسٹیٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز میں انڈر گریجوایٹ اور پوسٹ گریجویٹ میںداخلہ کا معیار سخت مقابلہ کے بعد ہوتا ہے ۔ جون 2016ء میں پی ایس پروگرام کی 120 نشستوں کے لئے 12247 امیدواروں نے مقابلہ کا امتحان دیا اور 7573 امیدواروں نے ایم ایس پروگرام اور فیلو شپ کی 200 نشستوں کے لئے مقابلہ کا امتحان دیا۔ طبعی سائنسز انجینئرنگ اور میڈیسن کے شعبوں میں پاکستان انسٹیٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز میں 145 اعلیٰ تعلیم یافتہ اساتذہ ہیں ۔

ان میں سے 100 اساتذہ نے امریکا ، کینیڈا،، برطانیہ ، جرمنی ،،فرانس،، چین ، جاپان، کوریا، آسٹریا اور آسٹریلیا سے پی ایچ ڈی کی ڈگریاں حاصل کی ہیں۔ اس یونیورسٹی سے 200 سکالرز پی ایچ ڈی کرچکے ہیں۔ پاکستان انسٹیٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز کے اساتذہ میں 3 ستارہ امتیاز، 3 تمغہ امتیاز، 6 پرائید آف پرفارمنس، 1 پریذیڈنٹ میڈل فار ٹیکنالوجی ، 1اعزاز کمال ، 3 اعزاز فضیلت اور 12 بیسٹ ٹیچر ایوارڈ کے حامل ہیں۔