محکمہ اینٹی کرپشن سرگودھا نے یونیورسٹی آف سرگودھا کے پروجیکٹ میں 6.2 ملین خرد برد کرنے کے الزام میں متعدد افراد کے خلاف مقدمات درج کر لئے

جمعہ جون 19:39

ْسرگودھا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 جون2018ء) محکمہ اینٹی کرپشن سرگودھا نے ، خوش آب پانی یونیورسٹی آف سرگودھا کے پرجیکٹ میں 6.

(جاری ہے)

2 ملین خرد برد کرنے کے الزام میں مصطفی مہرانی ، سابقہ منیجر سیلز اینڈ مارکیٹنگ خوش آب پانی ،یونیورسٹی آف سرگودھا وقاص رشید مالک وقاص ڈسٹری بیوٹر اور محمد رفیق مالک آڑاینڈ ای اینٹر پرائز کے خلاف مقدمہ درج،تفصیلات کے مطابق ریجنل ڈائریکٹر انٹی کرپشن سرگودھا کو عبدالباسط خزانچی یونیورسٹی آف سرگودھا نے تحریر کیا کہ وی سی یونیورسٹی آف سرگودھا نے مجھے خوش آب پانی کی پرموشن کے لئے معمور کیا ہے ،جب خوش آب پانی کا انٹر ل آڈت کیا گیا تو یہ بات سامنے آئی کہ مصفطی مہرانی مینجر سیلز اینڈ مارکیٹنگ خوش آب پانی اور گروپ آف ڈسٹری بیوٹرز نے 6.2 ملین روپے خوش آب پانی یونیورسٹی آف سرگدھا کے اکائوئنٹ میں جمع نہ کروائے ان کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے، جس پر ریجنل ڈائریکٹر انٹی کرپشن سرگودھا نے خوش آب پانی یونیورسٹی آف سرگودھا کے پروجیکٹ میں 6.2 ملین خرد برد کرنے کے الزام میں مصطفی مہرانی ، سابقہ مینجر سیلز اینڈ مارکٹینگ خوش آب پانی یونیورصی آف سرگودھا وقاص رشید مالک وقاص ڈسٹری بیوٹر اور محمد رفیق مالک آراینڈ ای اینٹر پرائز کے خلاف مقدجہ درج کرنے کے احکامات دیتے ہوئے مقدمہ کی تفتیش کیلئے خصوصی ٹیم تشکیل دے دی،

متعلقہ عنوان :