مقبوضہ کشمیر، انسانی حقوق کمیشن نے فوجی گاڑی کی ٹکر سے نوجوان کے قتل کی رپورٹ طلب کرلی

جمعہ جون 20:16

سرینگر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 جون2018ء) مقبوضہ کشمیرمیںانسانی حقوق کمیشن نے ایس ایس پی پولیس سرینگر اور ڈی جی پولیس سے یکم جون کو سرینگر میں بھارتی فوج کی سینٹرل ریزروپولیس فورس کے اہلکاروں کی گاڑی کی ٹکر سے ایک نوجوان کے قتل اور جنوبی کشمیرمیں لوگوں کے گھروں اور املاک کو تباہ کرنے کے بارے میں رپورٹ طلب کی ہے۔ جسٹس ریٹائرڈ بلال نازکی کی سربراہی میں کمیشن نے یہ ہدایات انٹرنیشنل فورم فار جسٹس اینڈ ہیومن رائٹس محمد احسن اونتو کی طرف سے دائر ایک عرضداشت کی سماعت کے دوران جاری کیں۔

(جاری ہے)

کمیشن نے ایس ایس پی سرینگر کو دو جولائی تک ایک کشمیری نوجوان قیصر بٹ کو سی آر پی ایف اہلکاروں کی گاڑی سے کچلنے کی تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ۔ عرضداشت میں فوجی گاڑی کے ڈرائیور کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیاگیا تھا ۔ جنوبی کشمیرمیں گھروں اور املاک کو نقصان پہنچانے اور لوٹ مار کے بارے میں عرضداشت کی سماعت کے دوران کمیشن نے ڈائریکٹری جنرل پولیسکو ان واقعات کی تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی ۔ درخواست گزار نے کمیشن سے استدعا کی ہے کہ وہ متعلقہ انتظامیہ کو بھارتی فورسز کی طرف سے عوامی املاک کو نقصان پہچانے سے روکیں۔