یورپ میں منشیات کے استعمال میں اضافہ

ہفتہ جون 10:30

برسلز ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) یورپی یونین میں منشیات سے متعلق امور کے نگراں ادارے کی جانب سے جاری کردہ ایک تازہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ یورپ بھر میں کوکین اور دیگر منشیات کے استعمال میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔اس رپورٹ کے مطابق یورپ بھر میں قریب 17 ملین بالغ شہریوں نے زندگی میں کبھی نہ کبھی کوکین استعمال کی، جن میں دو اعشاریہ تین ملین ایسے بالغ نوجوان بھی شامل ہیں جنہوں نے گزشتہ برس یہ نشہ کیا۔

یورپی نگراں ادارہ برائے منشیات کا کہنا ہے کہ اس سے اندازہ ہوتا ہے کہ کوکین سمیت مختلف منشیات کے استعمال میں تیز رفتار اضافہ ہو رہا ہے۔اس ادارے کے ڈائریکٹر ایلکس گوسڈیل کے مطابق حالیہ ایک دہائی میں یورپ بھر میں ہونے والا یہ اضافہ نمایاں ہے۔ یورپ لاطینی امریکا میں کوکین کی پیداوار میں اضافے کے نتائج بھگت رہا ہے۔

(جاری ہے)

گوسڈیل نے یورپ کے 31 شہروں میں سیوریج کے پانی کے نمونوں کی جانچ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان میں سے 26 شہروں میں منشیات کے استعمال کی شرح میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

یہ بات بھی اہم ہے کہ یورپ میں ایسی منشیات کے استعمال میں بھی اضافہ ہوا ہے، جو لیبارٹریوں میں مصنوعی طور پر تیار کی جاتی ہیں، جس میں ایم ڈی ایم اے بھی شامل ہے جس عرف عام میں ایسٹیسی کہا جاتا ہے۔ یورپی ادارے کی جانب سے یہ رپورٹ 2016ء میں جمع کیے جانے والے ڈیٹا کی بنیاد پر جاری کی گئی ہے۔