مہاجرین کے بحران میں نیٹو مدد کرے، اطالوی وزیر داخلہ

ہماری نئی حکومت امیگریشن کنٹرول کی لیے سخت انتظامات متعارف کرائے گی،میڈیا سے گفتگو

ہفتہ جون 15:50

روم(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) اطالوی وزیر داخلہ سالوینی نے کہا ہے کہ اٹلی کے جنوبی ساحلی علاقوں سے مہاجرین کی آمد روکنے کی خاطر مغربی دفاعی اتحاد نیٹو سے مدد طلب کی جائے گی۔ نئی حکومت امیگریشن کنٹرول کی لیے سخت انتظامات متعارف کرائے گی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اطالوی وزیر داخلہ ماتیو سالوینی نے بتایاکہ اٹلی کی نئی حکومت غیر قانونی مہاجرین کی ملک میں آمد کو روکنے کی خاطر سخت اقدامات کرے گی۔

سالوینی نے روم میں صحافیوں کو بتایا کہ اس مقصد کی خاطر مغربی دفاعی اتحاد نیٹو کو بھی مدد کرنا چاہیے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ ملک کے جنوبی ساحلی علاقے مہاجرین کی اٹلی آمد کے حوالے سے اہم ہیں، اس لیے وہاں خصوصی انتظامات کرنا ہوں گے۔انہوں نے کہاکہ قریبی جزیرہ ریاست مالٹا کو بھی مہاجرین کے بحران میں زیادہ فعال کردار ادا کرنا چاہیے۔سالوینی نے، جو اٹلی کے نائب وزیر اعظم بھی ہیں، کہاکہ میں نیٹو کی مدد لینے کے حق میں ہوں۔ ہم ایک حملے کی زد میں ہیں۔ ہم نیٹو کو کہیں گے کہ وہ ہمارا دفاع کرے۔انہوں نے کہا کہ ایسے تحفظات شدید ہیں کہ دہشت گرد بھی مہاجرین کے اس بحران میں یورپ پہنچ رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ اٹلی پر جنوب سے حملہ ہو رہا ہے، مشرق سے نہیں۔