کئی امیدواروں کونامزدگی فارم بھرنا ہی نہیں آرہا جس سے وقت ضائع ہورہا ہے،یوسف خٹک

جو امیدوار فارم نہیں بھر سکتا وہ اسمبلیوں میں قانون سازی کیسے کرے گا، الیکشن میں جو اساتذہ ڈیوٹی انجام نہیں دینگے انکے خلاف قانونی کارروائی ہوگی،صوبائی الیکشن کمشنر

ہفتہ جون 17:44

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) صوبائی الیکشن کمشنر محمد یوسف خان خٹک نے کہا ہے کہ افسوس ہے کہ کئی امیدواروں کونامزدگی فارم بھرنا ہی نہیں آرہا جس سے وقت ضائع ہورہا ہے، جو امیدوار فارم نہیں بھر سکتا وہ اسمبلیوں میں قانون سازی کیسے کرے گا، الیکشن میں جو اساتذہ ڈیوٹی انجام نہیں دینگے انکے خلاف قانونی کارروائی ہوگی۔ صوبائی الیکشن کمشنر محمد یوسف خان خٹک نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تمام سیاسی جماعتیں ترجیحی فہرست جلد جمع کروادیں، ایم کیو ایم کے علاوہ کسی سیاسی جماعت نے اب تک اپنی ترجیحی فہرست جمع نہیں کروائی ہے، ترجیحی فہرست اگر جمع نہیں کروائی گئی تو تمام فارمز مسترد کردیئے جائینگے، ان کا مزید کہنا تھا کہ 28 قومی اسمبلی 90 صوبائی اسمبلی 52 اقلیتی نشستوں پر فارم جمع ہو چکے ہیں، افسوس ہے کہ متعدد امیدواروں کو فارم پر کرنا نہیں آرہا ہے جس سے وقت ضائع ہو رہا ہے، جو امیدوار فارم نہیں پر کرسکتا وہ اسمبلیوں میں قانون سازی کیسے کرے گا۔

(جاری ہے)

محمد یوسف خان خٹک کا کہنا تھا کہ وائس چانسلر جامعہ کراچی الیکشن ڈیوٹی کرنے والے اساتذہ کی فہرست ڈی سی آفس میں جمع کروادیں، جو اساتذہ ڈیوٹی انجام نہیں دے گی انکے خلاف قانونی کاروائی ہوسکتی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ آئینی ذمہ داری ہے کہ آرٹیکل 220 کے تحت تمام ادارے صوبائی الیکشن کمشنر کو مدد فراہم کرینگے، الیکشن کمیشن خودمختار ارادہ ہے نگران حکومت کی مدد کی ضرورت نہیں ہے۔