ایم کیوایم پاکستان کو اب تک سیاسی آزادی نہیں دی گئی، کراچی کے حلقہ این اے 241 کورنگی سے کاغذات نامزدگی جمع کرادی ،فاروق ستار کی میڈیاسے گفتگو

ہفتہ جون 19:36

ایم کیوایم پاکستان کو اب تک سیاسی آزادی نہیں دی گئی، کراچی کے حلقہ ..
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) ایم کیوایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار کا کہنا ہے کہ ایم کیوایم پاکستان کو اب تک سیاسی آزادی نہیں دی گئی،،ایم کیوایم پاکستان کو اب تک سیاسی آزادی نہیں دی گئی، کراچی میں ایم کیوایم پاکستان کے دفاتر واپس کیے جائیں، 165 لاپتا افراد بازیاب نہیں کرائے گئے، بے گناہ اسیروں کو رہا نہیں کیاجارہا، مردم شماری کا تصدیقی عمل بھی نہیں ہوا، ترقیاتی فنڈز اب بھی سندھ بھر میں خرچ ہورہے ہیں، حلقہ بندیوں میں ناانصافی، ترقیاتی فنڈز کااستعمال قبل از انتخاب دھاندلی ہے، نگراں حکومت تقریباً پیپلز پارٹی کی ہے۔

وہ کراچی کے حلقہ این اے 241 کورنگی سے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے بعد صحافیوں سے گفتگو کر رہے تھے۔ سربراہ ایم کیوایم پاکستان نے کہاامیدواروں کے اخراجات پر پابندی لگائی گئی ہے، لیکن جماعت پر نہیں، ہمیں دیوار سے لگائے جانے کا عمل اب بندہونا چاہئیے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا میں نے الیکشن کے بائیکاٹ کا لفظ استعمال نہیں کیا، الیکشن کمیشن کو عبوری فیصلہ تسلیم کرنا چاہیئے۔

مائنس ون فارمولا تک توٹھیک، اگر ایم کیوایم کو مائنس کرنے کا تاثر ملا تو کوئی بھی فیصلہ کرسکتے ہیں۔ الیکشن کمیشن کو ایم کیوایم پاکستان کے کنوینر شپ پر میرانام لکھنا چاہیئے۔۔فاروق ستار نے حلقہ این اے 241، 245 اور247 سے کاغذات نامزدگی جمع کرادئیے۔ فاروق ستار نے کہاایم کیوایم پاکستان کی جانب سے کافی دوست کاغذات جمع کرارہے ہیں، این اے 243 میں عمران خان کا مقابلہ علی رضاعابدی کریں گے۔