عوام کے اشتراک سے تعلیم اور صحت کی بہتر سہولیات یقینی بنانے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں گے، سردار حسین بابک

18اے این پی کی کامیابی کا سال ہے ، صوبے کی معاشی و اقتصادی ترقی کیلئے منصوبہ بندی مکمل ہے،سیکرٹری جنرل اے این پی خیبرپختونخوا

ہفتہ جون 20:18

ٖٖپشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ 2018اے این پی کی کامیابی کا سال ہے اورپارٹی کے تمام امیدوار بھرپور تیاری کے ساتھ میدان میں ہیں،اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی گزشتہ حکومت نے تبدیلی کی اصلیت واضح کر دی ہے لہٰذا اب عوام کی اے این پی کی جانب رغبت اور تعاون جبکہ کارکنوں کے جذبے قابل دید ہیں ،انہوں نے کہا کہ آئندہ الیکشن میں حکومت میں آنے کے بعد عوام کے اشتراک سے تعلیم اور صحت کی بہتر سہولیات یقینی بنانے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں گے،انہوں نے کہا کہ صوبے کی معاشی و اقتصادی ترقی کیلئے مستقل اور ٹھوس بنیادوں پر زمینی حقائق کے مطابق منصوبہ بندی کر لی ہے ، انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی سابق حکومت نے صوبے کو مالی اور انتظامی بدحالی کا شکار کر دیا ہے ، سردار حسین بابک نے نگران حکومت سے توقع ظاہر کی کہ تھریک انصاف کی حکومت کی جانب سیاسی بنیادوں پر فنڈز کی تقسیم پر کڑی نظر رکھے گی اور ضرورت کے مطابق جاری سکیموں کو فنڈز سے محروم رکھنے کا ازالہ کر ے گی، انہوں نے یہ توقع بھی ظاہر کی کہ نگران حکومت انتہائی غیر جانبداری کا مظاہرہ کرے گی اور اپنے نگران دور حکومت میں قانون ، آئین کے مطابق اور شفافیت کے ساتھ اپنی ذمہ داریاں پوری کرے گی،انہوں نے کہا کہ فاٹا انضمام کے بعد خیبر پختونخوا بہت بڑا صوبہ بن گیا ہے لہٰذا انتظامی لوازمات اور ضرویات جلد از جلد پوری کرنا نگران صوبائی حکومت کی اولیں ترجیح ہونی چاہئے ، انہوں نے کہا کہ مرکز کی جانب سے سالانہ ترقیاتی پیکج کیلئے اعلان شدہ 100ارب روپے خرچ کرنے کیلئے نئے شامل اضلاع کے لوگوں کی مشاورت سے ان کی ضرورت کے مطابق مستقل اور مفاد عامہ کو مد نظر رکھتے ہوئے منصوبہ بندی کی ضرورت ہے ، انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا کی حکومت مرکزی حکومت کے ساتھ اعلان کردہ پیکج کیلئے ہنگامی بنیادوں پر رابطے میں رہیں تاکہ نئے شامل قبائلی علاقہ جات کی محرومیاں ختم ہوں ۔