بی این پی رہنماء حاجی زاہد حسین نے صوبائی اسمبلی حلقہ 43 کی کاغذات نامزدگی جمع کرادیئے

ہفتہ جون 20:20

پنجگور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنما حاجی زاہد حسین نے صوبائی اسمبلی حلقہ 43 کی کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے بعد باہر نمائندے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ بی این پی بلوچ قومی جماعت ہے جو بلوچ قوم کی عزت نفس اور بلوچستان کے سائل وسائل کی تحفظ کا بھیڑا اٹھا رکھاہے گزشتہ دور میں صوبے کے حالات بلوچ قوم کے حق میں نہیں تھے اس لئے ہم نے اپنے قومی مفادات کی خاطر میدان چھوڑ دیا جس کی وجہ سے بلوچستان حکومت میں غیر سیاسی لوگ آئیاور مسلسل قوم زوال کی جانب جارہی ہے بلوچ قومی مسائل کو مدنظر رکھتے ہوئیپارٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ 2018کے الیکشن میں بلوچستان بھرمیں اپنے امیدوار کھڑا کریں گے لیکن میدان کسی کے لیے خالی نہیں چھوڑیں گے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا ہے کہ بلوچستان 70سالوں ںسے کرپشن لوٹ مار نہ برابری کا شکار ہے کئی حکومتیں آ ئی اور گئی لیکن عوام آج پانی بجلی ایجوکیشن صحت ودیگر بنیادی سہولت سے محروم ہیں دودھ کی نہریں بہانے والوں نے بلوچستان کے عوام کو ایک گھونٹ پانی تک نہ دے سکے بی این پی کے اقتدار کے آنے سے بلوچستان کے بہت سے مسائل حل ہونگے ہم دعوا وعدہ نہیں کرتے ہیں عوام کوساتھ لے کر چلیں گے بلوچ قوم کو بہتر مستقبل اور خوشحالی چائے تو اپنے ووٹ کو بی این پی کودیں اس موقع پر بی این پی کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری میر نذیر احمد نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 270اور صوبائی اسمبلی 43 کیلئے میر کفایت اللہ محمد جان نے بھی اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرائے سینیئر رہنما حاجی عابد حسین افتخار بلوچ عبدالقدیر بلوچ محمد طاہر شیر احمد رضا ودیگر بھی انکے ہمراہ تھے۔