رمضان بازار کیلئے ضلع شیخوپورہ بھر کے رمضان بازاروں کیلئے مختص 7کروڑ کی گرانٹ میں بھاری پیمانے پر کرپشن کا انکشاف

ہفتہ جون 20:38

مانانوالہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 جون2018ء) مانانوالہ رمضان بازار کیلئے ضلع شیخوپورہ بھر کے رمضان بازاروں کیلئے مختص کی گئی 7کروڑ روپے کی گرانٹ میں بھاری پیمانے پر کرپشن کا انکشاف کروڑو ں روپے کو چو نا جس میں ڈی سی شیخوپورہ ارقم طارق اور تحصیلوں کے اے سی بھی ملی بھگت میں شامل گذشتہ روز مانانوالہ رمضان بازار میں ڈائر یکٹرایگریکلچرلیاقت علی رضا کے وزٹ کے دوران کرپشن کی تحریری رپورٹ کے باوجود سیکرٹری مارکیٹ کمیٹی مانانوالہ تنویر خالد اور سب انسپکٹر محمد عثمان کو رنگے ہاتھوں پکڑے جانے کے باوجود کانوں پر جوں تک نہیں رینگی تاحال خود ساختہ رپورٹیں بنا کر سبسڈی کو ہڑپ کرنے میں مصروف ہیں شہریوں کا وزیر اعلیٰ پنجاب اور سیکرٹری زراعت سے کاروائی کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب کی طرف سے 7کروڑ روپے کی گرانٹ جو کہ فی کس مارکیٹ کمیٹی فی رمضان بازار 10لاکھ روپے سبسڈی دی گئی جس میں عوام کے حصے میں فی بازار 2لاکھ روپے آتے ہیں جبکہ با قی ماندہ رقم کو ملازمین ہڑپ کرنے میں مصروف عمل ہیں عوام کا کوئی پٴْرسان حال نہ ہے گذشتہ دنوں کرپشن کا ایشو قومی اخبارات میں آنے پر ڈائر یکٹر ایگریکلچر مارکیٹ کمیٹی پنجاب لیاقت علی مانانوالہ آئے مگر کرپشن ثابت ہونے کے باوجود کاروائی کرنے میں بے بس ڈی سی شیخوپورہ ارقم طارق کو متعدد بار کہنے کے باوجود کرپشن مین ملوث افراد کے خلاف کاروائی عمل میں لانے کی بجائے تعریفی سرٹیفیکیٹس سے نوازنے لگے جس سے عوام میں غم و غصے کی لہر دوڑ گئی شہریوں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب اور سیکرٹری زراعت سے کاروائی کا مطالبہ کیا ہے تاکہ عوام کیلئے مختص کی گئی رقم کو ہڑپ کرنے والوں کا محاسبہ ہو سکے ۔

۔۔