دودھ ،دہی کی مصنوعی قلت کا ایک بار پھر خاتمہ کرنے کے لیے دودھ مافیا نے ماڈرن طریقہ کا ر اپنا لیا

پلاسٹک لفافوں میں دودھ ،دھی کی خوبصورت پیکنگ ‘دارلحکومت کی بڑی دکانات پر بڑے پیمانے پر سٹاک دیدیا گیا

اتوار جون 16:10

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 جون2018ء) دودھ ،دہی کی مصنوعی قلت کا ایک بار پھر خاتمہ کرنے کے لیے دودھ مافیا نے ماڈرن طریقہ کا ر اپنا لیاپلاسٹک کے لفافوں میں دودھ ،دھی کی خوبصورت پیکنگ کر کے دارلحکومت کی بڑی دکانات پر بڑے پیمانے پر سٹاک دے دیا گیا بلدیہ اور ضلعی انتظامیہ بھی تان کر سو گئی۔

(جاری ہے)

کئی بااثر سیاسی مداریوں کی پشت پناہی کا بھی انکشاف ،،پاکستان سے آنے والے معیاری حٖفظان صحت کے اصولوں کے عین مطابق فروخت کیا جانے والا دودھ پر بھی بلا جواز پابندی لگا کر غیر معیاری اور ناقص دودھ فروخت کرنے والوں کو کھلی چھٹی دے دی گئی باضبط زرائع کے مطابق بلدیہ کے زمہ داران نے غیر معیاری اورناقص دودھ نما زہر کو فروخت کرنیوالوں کے ساتھ ملی بھگت کرتے ہوئے لاکھوں روپے ہڑپ کرتے ہوئے عیدی وصول کرلی اور اس طرح عیدالفطر کے موقع پر سفیدزہر کو شہریوں تک پہنچانے کی کھلی چھٹی دے رکھی ہے شہریوں نے مطالبہ کیاہے کہ انتظامیہ کی طرف سے دہرے معیار پر چیف جسٹس نوٹس لیں ایک طرف دفعہ 144کا نفاذ جبکہ دوسرے طرف شہر کے گلی کوچوں اورمکانات پر حتکہ کے گیس فروخت کرنے ،فروٹ سبزی فروخت کرنے والوں نے بھی ڈیپ فریزر نصب کر کے دودھ دہی کی فروخت شروع کر رکھی ہے ۔

متعلقہ عنوان :