شامی جنگ ایک سال میں ختم ہوجائیگی ،دھرتی کا ایک ،ایک انچ کنٹرول میں لیں گے،شامی صدر

اتحادی ممالک میں اختلافات انہونی بات نہیں لیکن روس نے فیصلہ سازی میں کبھی زبردستی نہیں کی،برطانوی اخبار کو انٹرویو

اتوار جون 16:40

دمشق(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 جون2018ء) شامی صدر بشار الاسد نے ایسے تاثرات کو رد کر دیا ہے کہ ان کے ملک کے فیصلے روس کی جانب سے کیے جا رہے ہیں۔

(جاری ہے)

اتحادی ممالک میں اختلافات کوئی انہونی بات نہیں ہیں لیکن روس نے فیصلہ سازی میں کبھی زبردستی نہیں کی، شامی ریاست کا ایک ایک انچ علاقہ واپس حکومتی کنٹرول میں لے آئیں گے، اسد نے یہ بیان برطانوی اخبار کو ایک انٹرویو میں دیا،ایک سوال کے جواب میں اسد کا کہنا تھا کہ اتحادی ممالک میں اختلافات کوئی انہونی بات نہیں ہیں لیکن روس نے فیصلہ سازی میں کبھی زبردستی نہیں کی۔

اپنے اس انٹرویو میں شامی صدر نے کہا کہ ان کے ملک میں جاری خانہ جنگی آئندہ ایک سال میں ختم ہو سکتی ہے۔ انہوں نے اس عزم کا اظہار بھی کیا کہ وہ شامی ریاست کا ایک ایک انچ علاقہ واپس حکومتی کنٹرول میں لے آئیں گے۔

متعلقہ عنوان :