بلوچستان عوامی پارٹی طاہر محمود خان نے بھی کاغذات نامزدگی جمع کرادیے

چیئرمین ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی عبدالخالق ہزارہ نے حلقہ پی بی 27 سے الیکشن لڑیں گے

اتوار جون 18:20

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 جون2018ء) صوبائی دارالحکومت کوئٹہ سمیت صوبے کے مختلف اضلاع میں مختلف سیاسی ،مذہبی ،قوم پرست جماعتوں کے نامزد امیدواروں سمیت آزاد امیدواران کی بھی بڑی تعداد نے اتوار کے روز بھی ریٹرننگ آفیسران سے کاغذات نامزدگی حاصل اور جمع کرائے ، بلوچستان عوامی پارٹی کے طاہر محمود خان نے ریٹرننگ آفیسر کے پاس کاغذات نامزدگی جمع کرائے تو میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ان کاکہناتھاکہ گزشتہ دور حکومت کے دوران انہیں صرف4ماہ کی وزارت ملی اس لئے وہ عوام کی اس طرح سے خدمت نہ کرسکیں جس طرح انہیں کرنی چاہیے تھی ۔

انہوں نے کہاکہ کوئٹہ کی شہریوں کو صحت اور پانی سمیت قلت آب کے مسئلے کا سامناہے ،ہماری کوشش ہوگی کہ اب کے بار کامیابی کے بعد کوئٹہ میں پانی کے مسئلے کے حل کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جاسکے ،انتخابی سرگرمیوں میں اضافہ خوش آئند ہے کیونکہ انتخابات ایک جمہوری عمل ہے ۔

(جاری ہے)

ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کے چیئرمین عبدالخالق ہزارہ نے حلقہ پی بی 27کوئٹہ سے کاغذات نامزدگی جمع کئے اس موقع پر میڈیا نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ان کاکہناتھاکہ کوئٹہ میں حلقہ بندیوں کیلئے الیکشن کمیشن کی جانب سے نہ صرف سیاسی جماعتوں سے تجاویز طلب کی گئی تھی بلکہ ہماری تجاویز پر 90فیصد عملدرآمد بھی ہوا ،اس پر بعض سیاسی جماعتوں کو اعتراضات تھے اور انہوں نے ہائی کورٹ سے رجوع کیا ہائی کورٹ نے 8حلقوں پر ڈی لمیٹیشن کے احکامات جاری کئے جس کے خلاف ہم نے سپریم کورٹ سے رجوع کیا جس نے ہمارے حق میں فیصلہ دیا اب کے بار کئے جانے والے حلقہ بندیوں سے لگ رہاہے کہ اب کوئٹہ میں حقیقی عوامی نمائندوں کو آئندہ انتخابات میں کامیابی ملے گی ۔

انہوں نے کہاکہ عید کے بعد سیاسی درجہ حرارت میں مزید اضافہ ہوگا بلکہ ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی بھی ہم خیال جماعتوں اور جمہوری قوتوں کے ساتھ انتخابی الائنس کیلئے کوششیں کرینگی ہم منافرت ،فرقہ واریت اور تعصب سے ہٹ کر بات کرنے والی سیاسی جماعتوں کے ساتھ الائنس بنانے کی کوششیں کرینگے حلقہ پی بی 27سے جمعیت علماء اسلام (ف) کے نامزد امیدوار نصیب اللہ اچکزئی نے بھی کاغذات نامزدگی جمع کئے جبکہ بلوچستان عوامی پارٹی کے ولی محمد نورزئی بھی اپنے ساتھیوں سمیت کاغذات نامزدگی جمع کرے کیلئے موجود رہے ۔

جمعرات اسلامی کے زاہد اختر بلوچ نے حلقہ پی بی 29کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کئے بلکہ پشتونخوامیپ کے رہنماء جمال ترہ کئی نے قومی اسمبلی کی نشست پر انتخابات کیلئے فارم وصول کرلیاہے ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار کی جانب سے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 264پر بھی کاغذات جمع کرادئیے گئے ہیں دوسری جانب الیکشن کمشنر بلوچستان نیاز احمد بلوچ نے کہاہے کہ بلوچستان میں کاغذات نامزدگی جاری وصولی کا سلسلہ اتوار کوبھی جاری ہے،،بلوچستان کے تمام قومی و صوبائی حلقوں کے ریٹرننگ افسران کاغزات نامزدگی اج بھی جاری و وصول کر رہے ہیں،اب تک بلوچستان میں قومی اسمبلی کے 16 نشستوں کیلئے 122 کاغزات نامزدگی فارم جمع ہوئے ہیں، جبکہ صوبائی اسمبلی کے 51 حلقوں کیلئے 539 کاغزات نامزدگی فارم جمع ہوئے ہیں،صوبائی و قومی اسمبلی کی خواتین اور اقلیتوں کی مخصوص نشستوں کیلئے اب تک 144 نامزدگی فارم جاری ہوئے ہیں، قومی اسمبلی میں خواتین کی 4 مخصوص نشستوں کیلئے اب تک 11، صوبائی اسمبلی میں خواتین کی 11 نشستوں کیلئے 31 اور صوبائی اسمبلی میں اقلیتوں کی 3 نشستوں کیلئے 29 نامزدگی فارم جمع ہوئے ہیں، واضح رہے کہ الیکشن کمیشن کے نئے شیڈول کے مطابق کاغذات نامزدگی جاری و وصول کرنے کی اخری تاریخ آج 11جون ہے۔

اطلاعات کے مطابق پاک سرزمین پارٹی کے نامزد امیدواراران ندیم کاشانی نے چاغی خاران کی نشست این اے 268 ،امان اللہ سنجرانی پی بی 34 دالبندین ،میر خان رند نے پی بی 35مستونگ ،مراد بگٹی نے پی بی10ڈیرہ بگٹی ،سعیداحمدکرد نے پی بی 30کوئٹہ ،سیداکبر شاہ نے پی بی 32کوئٹہ،فیروز لانگو نے پی بی 29کوئٹہ ،میربشیراحمد محمدحسنی نے پی بی 49لسبیلہ ،سید ثناء اللہ آغا نے پی بی 28کوئٹہ ،حضرت علی سلیمانخیل نے پی بی 27،سید لیاقت آغا نے پی بی 25اور سید ثناء اللہ آغا نے حلقہ این اے 265سے کاغذات نامزدگی جمع کروادئیے ہیں ۔پرنس احمد علی بلوچ نے قومی اسمبلی کے نشست این اے 272لسبیلہ گوادر کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کروادئیے ہیں ۔