شاہد خان بھٹو نے پی ٹی آئی ٹکٹ نہ ملنے پر پارٹی چھوڑ دی، ارشاد علی خان جونیجو

اتوار جون 21:10

لاڑکانہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 جون2018ء) پاکستان تحریک انصاف ضلع لاڑکانہ کے صدر ارشاد علی خان جونیجو نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ شاہد خان بھٹو نے دن بدن پاکستان تحریک انصاف کی عوام میں بڑھتی ہوئی مقبولیت دیکھ کر پارٹی ٹکٹ کی لالچ میں پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کی تھی اور ٹکٹ نہ ملنے پر پارٹی چھوڑ دی۔

(جاری ہے)

وہ اب کہہ رہا ہے کہ اسے بلاول زرداری کے خلاف الیکشن لڑنے کے انکار پر پارٹی سے نکالا گیا مگر حقیقت یہ ہے کہ وہ آخری دن تک پارٹی قیادت کو منت سماجت کرتا رہا کہ مجھے بلاول زرداری کے خلاف کھڑا ہونے کیلئے ٹکٹ دی جائے اور یہ بھی کہتا رہا کہ کامیاب تو نہیں ہوں گا مگر عزت سے ہاروں گااگر اس کو بلاول زرداری کا اتنا ہی احترام تھا تو وہ پھر اس کو چھوڑ کر پاکستان تحریک انصاف میں کیوں شامل ہوا تھا ارشاد خان جونیجو نے مزید کہا کہ شاہد خان بھٹو 2 بار پیپلز پارٹی کی ٹکٹ اور ووٹوں پر ایم این اے بنا تھا مگر جب گذشتہ 2013ء کے عام انتخابات میں آزاد امیدوار کی حیثیت میں کھڑا ہوا تھا تو انہیں تقریباً 3 ہزار ووٹ ملے تھے اور وہ اپنے گائوں کی پولنگ بھی ہار گیا تھا جبکہ اس کو اپنے ملازمین اور ہاریوں نے بھی ووٹ نہیں دیئے تھے ۔