جیکب آباد، یوٹیلٹی اسٹورز پر اشیاء خوردونوش کی قلت شہریوں کو رمضان کا ریلیف نہ مل سکا

16میں سے 8اسٹورز بند ہوگئے سبسڈی نہیں ملی بروقت ادائیگی نہ ہونے پر ویئر ہائوس خالی ہیں :ایریا انچارج

اتوار جون 21:40

جیکب آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 جون2018ء) جیکب آبادمیں یوٹیلٹی اسٹورز پر اشیاء خوردونوش کی قلت شہریوں کو رمضان کا ریلیف نہ مل سکا 16میں سے 8اسٹورز بند ہوگئے سبسڈی نہیں ملی بروقت ادائیگی نہ ہونے پر ویئر ہائوس خالی ہیں :ایریا انچارج تفصیلات کے مطابق حکومتی عدم توجہی کی وجہ سے جیکب آبادمیں یوٹیلٹی اسٹورز شہریوں کو ریلیف دینے میں مکمل ناکام گئے ہیں رمضان پیکج کا بھی عوام کو کوئی فائدہ نہ ہواجیکب آبادشہرمیں 16یوٹیلٹی اسٹورزمیں سے 8اسٹورز ایئر پورٹ روڈ،پی اے ایف ،،غریب آباد محلہ ،مدینہ رائس مل ،ڈنگر محلہ ،اسپیشل فورس روڈ ،اسٹیشن روڈ کے یوٹیلٹی اسٹورزبند ہوگئے ہیں جبکہ پیر بخاری،ٹاور روڈ،دستگیر کالونی،،کوئٹہ روڈ،گڑھی سبھایو ،فیضان مدینہ اور افضل کھوسوروڈ پر قائم یوٹیلٹی اسٹور زپر اشیاء خوردونوش کی قلت ہے اسٹورپر روزمرہ کے استعمال کا مکمل سامان تک موجود نہیں شہریوں نے شکایت کی ہے کہ اسٹورپر موجود اشیاء کے نرخ مارکیٹ سے بھی زیادہ ہیں کم نہیں اور اشیائے خوردونوش کی قلت بھی ہے اس سے پہلے بازار جانے کی ہمیں ضرورت نہیں پڑتی تھی روزمرہ کے استعمال کا ساراسامان یوٹیلٹی اسٹورزسے مل جاتاتھا حکومت کو اس طرف توجہ دینی چاہیے دوسری جانب رابطہ کرنے پر جیکب آبادکے یوٹیلٹی اسٹورزکے ایریا مینیجر فداحسین بنگلانی نے رابطے پر بتایاکہ حکومت کی جانب سے دی جانے والی سبسڈی کی بروقت کمپنی کو ادائیگی نہیں کی گئی اس وجہ سے ہمارے ویئر ہائوس خالی ہیں اورسامان کی قلت ہے انہوںنے جیکب آبادمیں 8اسٹورزکے بند ہونے کے متعلق بتایاکہ ان کی اتنی سیل نہیں تھی اورمذکورہ اسٹورز خسارے میں تھے انہوںنے کہاکہ اگر اعلان کردہ سبسڈی کے بروقت ادائیگی کردی جاتی تو شہریوں کو پریشانی کا سامنا نہ کرناپڑتا اس وقت بھی حکومت یوٹیلٹی اسٹورزکارپوریشن کی اربوں روپے کی مقروض ہے ۔

متعلقہ عنوان :