ن لیگ کے سینئیر رہنما میرے پاس آئے اور کہا کہ ۔۔۔؟ ریحام خان نے نا قابل یقین دعوی کر دیا

پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئیر رہنما نے مجھے عمران خان کے خلاف بولنے سے منع کیا تو میں حیران رہ گئی،ریحام خان کی دوران پروگرام گفتگو

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان پیر جون 13:40

ن لیگ کے سینئیر رہنما میرے پاس آئے اور کہا کہ ۔۔۔؟ ریحام خان نے نا قابل ..
لاہور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 11 جون 2018ء) : پاکستان تحریک ا نصاف کے چئیرمین عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان کی کتاب کے اس وقت خوب چرچے ہیں اور تحریک انصاف کی طرف سے کہا جا رہا ہے کہ ریحام خان کی اس کتاب کے پیچھے ن لیگ ہے۔اسی متعلق گفتگو کرتے ہوئے ریحام خان کا کہنا تھا کہ میں یہ کتاب کسی کے کہنے پر نہیں لکھ رہی۔۔پاکستان مسلم لیگ ن کے کسی بھی بڑے رہنما نے مجھے کبھی بھی کوئی پریس کانفرس تو کیا ایک بیان تک دینے کو نہیں کہا۔

ریحام خان کا مزید کہنا تھا کہ ابھی میں نے کتاب لکھنے کا ارادہ نہیں کیا تھا تو میں ایک آفس گئی جہاں ن لیگ کے بہت سینئیر سیاست دان موجود تھے۔وہ میرے پاس آئے اور کہا کہ ریحام خان آپ کسی کے خلاف چاہے جو بھی بولیں لیکن عمران خان کے خلاف کچھ نہ بولیں۔

(جاری ہے)

جو کچھ بھی ہوا وہ آپ بھول جائیں۔تو مجھے بہت حیرانی ہوئی کہ مسلم لیگ ن کے رہنما یہ کہہ رہے ہیں۔

اور پھر جب میں نے کتاب لکھنے کا اعلان کیا تو مجھے ان کی کال آئی اور کہا کہ آپ اس کتاب میں عمران خان سے متعلق کچھ نہ لکھیں۔تو میں نے وہاں موجود لوگوں کو بتایا کہ دیکھیں یہ ہے مسلم لیگ ن جو مجھے عمران خان کے خلاف بولنے سے منع کر رہی ہے۔یاد رہے پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان کی کتاب منظر عامر پر آنے والی ہے۔

ریحام خان کی یہ کتاب الیکشن سے قبل پاکستان،،،بھارت ترکی اور برطانیہ میں منظر عام پر آ جائے گی۔ یہ کتاب ریحام خان کہ سوانح عمری کے تہلکہ خیز انکشافات پر مشتمل ہے ۔۔ریحام خان نے اپنے پہلے شوہر سے طلاق کے بعد صحافت میں قدم رکھا تھا اور صحافی کیرئیر میں اپنا نام بنایا تھا۔اپنے صحافتی دور میں ہی ریحام خان نے پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان سے شادی کی تھی۔

تاہم یہ شادی کچھ ماہ ہی چل سکی تھی۔زرائع نے بتایا ہے کہ ریحام خان نے اس کتاب میں اپنی دونوں شادیوں کے ناکام ہونے کی وجوہات بتائی ہیں۔ خاص طور پر عمران خان سے شادی سے لے کر طلاق تک جو بھی واقعات ہوئے ان سب کا تفصیلی ذکر کیا گیا ہے۔اس کے علاوہتحریک انصاف کی لیڈر شپ اور پارٹی امور سے متعلق بھی کئی تفصیلات اس کتاب کا حصہ ہوں گی۔پارٹی کے چند اندورنی معاملات کا ذکر بھی کیا گیا ہے جب کہ عمران خان کے قریبی ساتھی عون چوہدری،مراد سعید اور عندلیب عباس سے متعلق بھی اس کتاب میں ذکر کیا گیا ہے۔