کیا عائشہ احد کیس نمٹانے کے پیچھے کسی ڈیل کا ہاتھ ہے؟

فریقین کے درمیان ہونے والے راضی نامہ سے متعلق کوئی بھی سوال نہیں کر سکتا؟ معروف صحافی نے عائشہ احد کیس میں ڈیل ہونے کا اشارہ دے دیا

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان پیر جون 15:53

کیا عائشہ احد کیس نمٹانے کے پیچھے کسی ڈیل کا ہاتھ ہے؟
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔11 جون 2018ء) آج سپریم کورٹ نے عائشہ احد کیس نمٹا دیا ہے۔عائشہ احدکیس کی آج سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں سماعت ہوئی تھی۔دوران سماعت چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ حمزہ شہباز اور عائشہ احد کے مابین معاملات طے پا گئے ہیں، دونوں کے مابین راضی نامہ طے ہوگیا اور صلح ہو گئی ہے۔ فریقین ایک دوسرے کے خلاف مقدمات واپس لیں گے۔

چیمبر میں ہونے والے معاملات میڈیا پر نہیں آئیں گے نہ ہی فریقین میڈیا پر ایک دوسرے کے خلاف بیان دیں گے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ جن شرائط پر راضی نامہ ہوا ان کو ہرگز منظر عام پر نہیں لایا جائے گا۔ جس کے بعد سپریم کورٹ نے عائشہ احد کیس نمٹا دیا۔اسی متعلق معروف صحافی وتجزیہ نگار ارشد شریف نے ایک ٹویٹ کیا ہے اور عائشہ احد کیس نمٹانے میں کسی ڈیل کی طرف اشارہ کیا ہے۔

(جاری ہے)

اور کہا ہے کہ کسی کو بھی عائشہ احد اور حمزہ شہباز شریف کے درمیان ہونے والے راضی نامہ کے متعلق سوال کرنے کی اجازت نہیں ہے۔چیمبر میں پارٹیوں کے درمیان ڈیل طے پا گئی ہے۔ارشد شریف نے انصاف اور چیف جسٹس کو سراہا۔
یاد رہے کہ گزشتہ روز چیف جسٹس آف پاکستان نے عائشہ احد کیس میں حمزہ شہباز اور عائشہ احد کو عدالت میں طلب کیا تھا،عائشہ احد کا دعویٰ ہے کہ حمزہ شہباز نے ان سے شادی کی تھی اور شادی کرنے کے بعد تشدد کا نشانہ بھی بنایا تھا۔

یاد رہے کہ عائشہ احد نے دعویٰ کر رکھا ہے کہ حمزہ شہباز شریف نے ان کو ہراساں کیا ور ان پر تشدد بھی کیا تھا۔ 2جون کو حمزہ شہباز کی مبینہ اہلیہ انصاف کے لیے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری پہنچ گئی تھیں۔ جس پر سپریم کورٹ نے فوری نوٹس لیتے ہوئے حکم دیا تھا کہ حمزہ شہباز دوپہر ایک بجے عدالت پہنچ جائیں۔تاہم وہ عدالت میں پیش نہیں ہوئے۔ چیف جسٹس نے حمزہ شہباز کو طلب کرتے ہوئے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو ہدایت کی تھی کہ وہ شہباز شریف کو فون کر کے حمزہ شہباز کی پیشی کو یقینی بنائیں،کیونکہ ہم کسی کی جان کو خطرہ میں نہیں دیکھ سکتے۔