آئی جی پختونخوا پولیس کا صوبہ بھر کے تمام ڈی آئی جیزکو عید الفطرپر ہوائی فائرنگ کے خاتمے کیلئے سخت اقدامات اٹھانے کی ہدایت

پیر جون 18:39

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جون2018ء) آئی جی پختونخوا پولیس صلاح الدین خان محسود نے صوبہ بھر کے تمام ڈی آئی جیز اور ضلعی پولیس آفیسروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے اپنے ریجنز اور اضلاع میں چاند رات اور عیدالفطر کے تہوار کے موقع پر ہوائی فائرنگ کی قبیح فعل کی روک تھام کے لیے موثر اقدامات اٴْٹھائیں۔یہاں سے جاری ہونے والے ایک حکم نامے میں آئی جی پی نے کہا ہے کہ ہمارا مذہب ہمیں امن و آشتی اور بھائی چارے کا درس دیتا ہے جبکہ ہوائی فائرنگ ایک غیر اسلامی اور غیر قانونی فعل ہے۔

حکم نامے میں مزید کہا گیا ہے کہ بلا اشتعال ہوائی فائرنگ سے نہ صرف قیمتی انسانی جانیں ضائع ہونے کا خطرہ ہوتا ہے بلکہ اس سے پٴْر امن عوام میں خوف و ہراس بھی پیدا ہوتاہے۔ حکم نامے میں واضح کیا گیا ہے کہ معاشرے کی بقا اور بہتری اسی میں ہے کہ ہم معاشرے سے ہوائی فائرنگ جیسی لعنت کا خاتمہ کریں کیونکہ اندھی گولی کسی کا گھر اٴْجاڑ سکتی ہے اور کسی کو تمام عمر کا روگ دے جاتی ہے۔

(جاری ہے)

حکم نامے میں پولیس حکام کو یاد دلایا ہے کہ عوام کو تحفظ فراہم کرنا پولیس کی ذمہ داری ہے اس لیے وہ بالخصوص چاند رات اور عیدالفطر کے موقع پر ہوائی فائرنگ جیسی سماجی لعنت کے تدارک کے لیے اپنا پیشہ ورانہ کردار بھر پور طریقے سے ادا کریں اور اس سلسلے میں عوام، سیاسی و سماجی تنظیموں سے قریبی رابطہ رکھکر اپنے اپنے علاقوں میں خصوصی مہم چلائیں۔

اور عوام میں ہوائی فائرنگ جیسی جان لیوا رسم کے مضمرات کے خلاف شعوراٴْجاگر کریں۔ انہیں مزید ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ہوائی فائرنگ کے مرتکب افراد کے خلاف بلا امتیاز قانونی کاروائی کریں۔ حکم نامے میں خبردار کیا گیا ہے کہ جس پولیس آفیسر کے علاقے سے چاند رات اور عیدالفطر کے موقع پر ہوائی فائرنگ کی شکایت موصول ہوئی تو متعلقہ ایس ڈی پی اٴْوز اور ایس ایچ اٴْوز کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائیگی۔

متعلقہ عنوان :