شہباز شریف اور مریم نواز کا پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہونا ڈرامہ اور نوٹنکی ہے

یہ لوگ اپنے کارکنوں سے سیدھے منہ بات نہیں کرتے اور پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہو کر کس کو بیوقوف بنارہے ہیں،معروف تجزیہ نگار حسن نثار کی شہباز شریف،مریم نواز اور حمزہ شہباز پر تنقید

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان منگل جون 12:52

شہباز شریف اور مریم نواز کا پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہونا ڈرامہ ..
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔12 جون 2018ء) پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف ٹکٹ کے حصول کے لیے ن لیگ کے پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہوئے تھے۔۔شہباز شریف کے اس اقدام کو جہاں کچھ لوگوں نے سراہا وہیں کچھ لوگوں نے تنقید بھی کی اور کہا کہ شہباز شریف کا پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہونا محض ڈرامہ تھا۔جب کہ سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے بھی شہباز شریف کے اس اقدام پر تنقید اور کہا کہ کیا کبھی ایسا ہوا ہے کہ سینئیر پارٹی رہنما بھی ٹکٹوں کے لئے پارلیمانی بورڈ کے سامنے انٹر ویو دے رہے ہوں۔

یہ صرف اس لیے کیا گیا تا کہ میں بھی پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہوں۔قومی اخبار کی ایک رپورٹ کے مطابق معروف صحافی حسن نثار کا پارلیمانی بورڈ کے سامنے شہباز شریف کے پیش ہونے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ شہباز شریف،، مریم نواز اور حمزہ شہباز کا ٹکٹ کیلئے پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہونا ڈرامہ اور نوٹنکی ہے، یہ لوگ اپنے کارکنوں سے سیدھے منہ بات نہیں کرتے اور پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہو کر کس کو بیوقوف بنارہے ہیں؟۔

(جاری ہے)

جب کہ حفیظ اللہ نیازی کا کہنا تھا کہ شہباز شریف،،،مریم نواز اور حمزہ شہباز پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہوکر صرف ڈرامہ کررہے ہیں، چوہدری نثار جیسے سینئر لیڈر کو ٹکٹ لینا نہیں بلکہ ٹکٹ دینا چاہئیے تھا، یہ ان کی غلط فہمی ہے کہ چوہدری نثار کو ٹکٹ نہیں دیں گے تو انہیں مشکل ہوگی، چوہدری نثار کو ان کی رائے کی وجہ سے کارنر کرنا درست نہیں ہے۔یاد رہے کہ ن لیگ کا 35رکنی پارلیمانی بورڈ تشکیل دیا گیا تھا،پارلیمانی بورڈ کے سامنے شہباز شریف ان کے بیٹے حمزہ شہباز پیش ہوئے جب کہ ن لیگ کے تا حیات قائد نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز بھی پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہوئیں اور ٹکٹ کے لیے انٹرویو دیا تھا۔